Tuesday , August 22 2017
Home / پاکستان / پاکستان میں 2 لاکھ فوجی شمالی عسکریت پسندوں سے برسرپیکار

پاکستان میں 2 لاکھ فوجی شمالی عسکریت پسندوں سے برسرپیکار

وزیراعظم پاکستان کے خصوصی معاون سید طارق فاطمی کا امریکی ذرائع ابلاغ کو انٹرویو
اسلام آباد۔ 6 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان میں 2 لاکھ فوجی شمالی علاقہ میں اور سرحد پر جو افغانستان سے متصل ہے، اس علاقہ سے عسکریت پسندوں کے صفائے کیلئے اور ان کے پوشیدہ ٹھکانے منہدم کرنے کیلئے تعینات کئے ہیں۔ اسپیشل اسسٹنٹ برائے وزیراعظم نواز شریف برائے خارجی اُمور سید طارق فاطمی نے جو امریکہ کے دورہ پر ہیں، تاکہ منتخب صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے تحت امریکی حکومت سے خوشگوار تعلقات قائم کرنے کی کوشش کریں، ذرائع ابلاغ کو انٹرویو دیتے ہوئے یہ انکشاف کیا۔ دفتر خارجہ ایک بیان میں پاکستان میں دہشت گردی اور عسکریت پسندی کے خاتمہ کیلئے بے لچک پابندی موجود ہے۔ فاطمی نے کہا کہ پاکستان 5,000 سے زائد فوجیوں کی جانیں دہشت گردی کے خلاف جنگ میں قربان کرچکا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ پاکستان کے لئے ایک مشکل مہم ہے اور اس کے لئے پاکستان بھاری قیمت چکا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں اب دہشت گردی ماضی کی بہ نسبت بہت کم ہے۔ فی الحال دہشت گرد فرار میں مصروف ہیں اور انہیں  مایوسی کے نتیجہ میں آسان نشانوں پر حملہ کرنا پڑ رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان قومی لائحہ عمل نافذ کررہا ہے تاکہ عسکریت پسندی سے پورے ملک کو پاک کردیا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ دہشت گردی اور اس کی ہر نوعیت سے چھٹکارہ حاصل کرنے کے سلسلے میں پورا ملک متحد ہے۔

TOPPOPULARRECENT