Monday , August 21 2017
Home / دنیا / پاکستان نے 1974 معاہدہ کی خلاف ورزی کی

پاکستان نے 1974 معاہدہ کی خلاف ورزی کی

کئی دہوں سے اپنے شہریوں کو واپس لینے سے انکار : بنگلہ دیش
ڈھاکہ 14 مئی ( سیاست ڈاٹ کام ) بنگلہ دیش نے آج پاکستان پر الزام عائد کیا کہ اس نے 1971 کی جنگ آزادی کے بعد طئے پائے معاہدہ کی اپنے ہزاروں شہریوں کو واپس نہ بلاتے ہوئے خلاف ورزی کی ہے ۔ اس خلاف ورزی کے نتیجہ میں اس معاہدہ کی اہمیت ہی متاثر ہوگئی ہے ۔ بنگلہ دیش کے وزیر قانون انیس الحق نے آج ایک مباحثہ میں کہا کہ 1974 کے بنگلہ دیش ۔ ہندوستان ۔ پاکستان معاہدہ کے تحت پاکستان کا یہ ذمہ تھا کہ وہ بنگلہ دیش میں پھنسے اپنے شہریوں کو واپس طلب کرلے ۔ پاکستان نے اپنی یہ ذمہ داری کئی دہوں سے پوری نہیں کی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بنگلہ دیش نے اپنی جانب سے معاہدہ کی پابندی کی ہے اور پاکستان کے شکست خوردہ سپاہیوں کو واپس جانے کی اجازت دی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بنگلہ دیشی جنگی جرائم کے مرتکبین کو کیفر کردار تک پہونچاتے ہوئے پاکستان نے معاہدہ کی خلاف ورزی قطعی نہیں کی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ قانونی اصول کے مطابق اگر کوئی فریق معاہدہ کی خلاف ورزی کرتا ہے تو اس معاہدہ کی درستگی اور اہمیت ہی مشکوک ہوجاتی ہے جبکہ پاکستان نے خود واضح طور پر اس معاہدہ کی خلاف ورزی کی ہے اور اس نے کئی دہوں سے یہاں پھنسے ہوئے اپنے شہریوں کو واپس نہیں لیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT