Thursday , September 21 2017
Home / پاکستان / پاکستان کومادر دہشت گردی قرار دینا گمراہ کن

پاکستان کومادر دہشت گردی قرار دینا گمراہ کن

بریکس کانفرنس میں وزیراعظم مودی کے ریمارک پر سرتاج عزیز کا ردعمل
اسلام آباد ۔ 17 اکتوبر ۔ (سیاست ڈاٹ کام ) ہندوستان میں منعقدہ برکس (برازیل، روس، انڈیا، چین اورساوتھ افریقہ) سربراہ اجلاس میں پاکستان کو ’دہشت گردی کی ماں‘ قرار دینے اور  دہشت گردی کے خلاف متحد ہو کر فیصلہ کن کارروائی کرنے کے ساتھ جاری منشور کے علاوہ وزیراعظم نریندر مودی کے بیان پر سخت ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے پاکستانی مشیر خارجہ سرتاج عزیز نے کہا ہے کہ ہندستان برکس اور بنگال انیشی ایٹیو فار ملٹی سیکٹورل ٹیکنیکل اینڈ اکنامک کوآپریشن کو کو گمراہ کر رہا ہے ۔واضح رہے کہ برکس ممالک نے کل دہشت گردی کے خلاف متحد ہو کر فیصلہ کن کارروائی کرنے کے ساتھ جموں و کشمیر کے اڑي میں ہونے والے دہشت گردانہ حملے کی مذمت کی اور کہا کہ رکن ممالک دہشت گردی کے لئے اپنی زمین کا استعمال نہیں ہونے دیں گے ۔ریڈیو پاکستان کی ایک رپورٹ کے مطابق سرتاج عزیز نے عالمی برادری خصوصاً برکس رہنماؤں پر زور دیا کہ ہندوستان کو کشمیریوں کا مبینہ طور پر خون بہانے سے فوری طور پر روکا جائے ۔اسی کے ساتھ انہوں نے یہ الزام بھی لگا یا کہ ہندستانی قیادت کشمیر میں اپنے مبینہ مظالم اور بربریت چھپانے اور کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کو دہشت گردی سے جوڑنے کی کوشش کر رہی ہے ۔سرتاج عزیز کا کہنا تھا کہ کشمیر ایک عالمی سطح پر تسلیم شدہ مسئلہ ہے اور یہ اقوام متحدہ کی سکیورٹی کونسل کے ایجنڈے پر بھی ہے ۔واضح رہے کہ گوا میں ہونے والے برِکس اجلاس کی میزبانی کے دوران ہندستان نے دہشت گردی سے نبر دآزمائی میں پاکستان کو تنہا کرنے اور بین الاقوامی برادری کو متحد کرنے کی مہم کا آغاز کیا اوراختتامی خطاب میں مسٹر مودی نے دہشت گردوں کے حامیوں کو خطرہ قرار دیتے ہوئے پاکستان کا نام لیے بغیر کہا کہ خطے میں اقتصادی خوشحالی کیلئے سب سے بڑا خطرہ دہشت گردی ہے اور المیہ یہ ہے کہ اس کا مرکز پڑوس میں واقع ایک ملک ہے ۔

TOPPOPULARRECENT