Saturday , August 19 2017
Home / کھیل کی خبریں / پاکستان کو 330 رنز کی شکست‘انگلینڈ کی سیریز میں واپسی

پاکستان کو 330 رنز کی شکست‘انگلینڈ کی سیریز میں واپسی

مانچسٹر ۔26 جولائی (سیاست ڈاٹ کام ) انگلینڈ نے دوسرے ٹسٹ  میں عمدہ کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے پاکستان کو 330 رنز کے واضح فرق  سے شکست دے کر 4 ٹسٹ میچوں کی سیریز  1-1 سے برابر کردی۔انگلینڈ کی جانب سے دیے گئے 565 رنز کے ہدف کے تعاقب میں پاکستان کی پوری ٹیم 234 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی۔ اولڈ ٹریفورڈ، مانچسٹر میں کھیلے گئے سیریز کے دوسرے ٹسٹ میچ کے چوتھے دن انگلینڈ نے 98 رنز ایک کھلاڑی آؤٹ سے اپنی نامکمل اننگز شروع کی تو اسے پہلے ہی میچ میں واضح برتری حاصل تھی۔ کپتان السٹر کک اور جو روٹ نے پہلی اننگز کی طرح دوسری اننگز میں بھی پاکستانی بولنگ کو تختہ مشق بنانے کا سلسلہ جاری رکھا اور جارحانہ مظاہرہ کیا جس کا کسی پاکستانی بولر کے پاس کوئی جواب نہ تھا۔ دونوں کھلاڑیوں نے عمدہ بیٹنگ کی بدولت اپنی نصف سنچریاں بنائیں اور اسکور 173 تک پہنچا تو کک نے اننگز ڈکلیئر کرنے کا اعلان کردیا، انگلش کپتان نے 76 اور روٹ نے ناقابل شکست 71 رنز بنائے۔ پہلی اننگز کی ہمالیائی سبقت کی بدولت انگلینڈ نے پاکستان کو میچ میں فتح کیلئے 565 رنز کا ریکارڈ ہدف دیا ہے جہاں مہمان ٹیم جو اپنی پہلی اننگز میں صرف 198 رنز پر ڈھیر ہو گئی تھی اسکی دوسری اننگزکا آغاز کچھ مختلف نہ تھا اور سات کے مجموعی اسکور پر شان مسعود ایک رن بنا کر جیمز اینڈرسن کو وکٹ دے بیٹھے۔ اظہر علی کی ناقص فارم کا سلسلہ بھی جاری رہا اور وہ محض آٹھ رنز بنا کر جیمز اینڈرسن کی گیند پر وکٹوں کے سامنے پیڈ لانے کی وجہ سے  آؤٹ قرار پائے۔ انگلینڈ جلد ہی تیسری کامیابی سے اس وقت محروم رہ گیا جب بین اسٹوکس کی گیند پر یونس خان کا سلپ میں جانے والا کیچ السٹر کک تھامنے میں ناکام رہے۔

تیسری وکٹ کیلئے حفیظ اور یونس خان نے 58 رنز جوڑے ہی تھے کہ وکٹ پر سیٹ نظر آنے والے محمد حفیظ (42) معین علی کو وکٹ دے بیٹھے۔یونس خان(28) پوری اننگز کے دوران ایک مرتبہ پھر پریشان نظر آئے اور مشکل حالات میں غیر ذمہ دارانہ شاٹ کھیلنے کے بعد پویلین لوٹے۔مصباح الحق(35) اور اسد شفیق (39)کی شراکت نے کچھ دیر کے لئے وکٹیں گرنے کے سلسلے کو روک دیا لیکن باقی کھلاڑیوں کی طرح مہمان  ٹیم کے کپتان بھی غیر ذمہ داری کا مظاہرہ کرتے ہوئے اپنی وکٹ دے کر چلتے بنے۔ سرفراز احمد (7)ایک بار پھر کچھ کر دکھانے میں ناکام رہے جبکہ اسد شفیق، جیمز اینڈرسن کی گیند پر ایل بی ڈبلیو قرار پائے اور یاسر شاہ کی اننگز بھی دس رنز تک محدود رہی۔ وہاب ریاض اور محمد عامر نے نویں وکٹ کے لئے چند رنز جوڑے لیکن ان کی یہ کاوش بھی فتح کو صرف کچھ دیر ٹالنے کے مترادف ثابت ہوئی۔234 رنز پر محمد عامر کے آؤٹ ہوتے ہی انگلینڈ نے میچ میں جیت کر مہر ثبت کرتے ہوئے سیریز 1-1 سے برابر کردی۔پاکستان کی پوری ٹیم دوسری اننگز میں 234 رنز بنا کر آؤٹ ہوئی اور انگلینڈ نے 330 رنز سے فتح اپنے نام کی۔جوروٹ کو میچ میں ڈبل سنچری سمیت مجموعی طور پر 325 رنز بنانے پر بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔ سیریز کا تیسرا ٹسٹ میچ تین اگست کو برمنگھم میں کھیلا جائے گا۔ یاد رہے کہ ٹسٹ کرکٹ میں آج تک کسی بھی ٹیم نے اتنے بڑے ہدف کا تعاقب نہیں کیا جبکہ سب سے زیادہ 418 رنز کے ہدف کے حصول کا ریکارڈ ویسٹ انڈیز کے  نام  ہے جو اس نے آسٹریلیا کے خلاف حاصل کیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT