Wednesday , August 23 2017
Home / شہر کی خبریں / پرانے شہر میں میٹرو ریل خدمات کے امکانات موہوم ، وزیر بلدی نظم و نسق کے ٹی آر جواب دہی سے قاصر

پرانے شہر میں میٹرو ریل خدمات کے امکانات موہوم ، وزیر بلدی نظم و نسق کے ٹی آر جواب دہی سے قاصر

سیاسی مداخلت و رکاوٹ سے روٹ کی تبدیلی ، میٹرو ریل پراجکٹ عہدیداران بھی خاموش
حیدرآباد۔22مئی (سیاست نیوز) میٹرو ریل پرانے شہر میں نہیں شروع کی جائے گی! شہر میں میٹرو ریل کے تیز رفتار کاموں کے دوران اب یہ سوا ل کیا جانے لگا ہے کہ پرانے شہر میں میٹرو چلائی جائے گی یا نہیں اگر چلائی جائے گی تو میٹرو کے تعمیری کاموں کا آغاز کب کیا جائے گا؟ ریاستی حکومت بالخصوص ریاستی وزیر بلدی نظم و نسق مسٹر کے ٹی راما راؤ خود اس مسئلہ پر کوئی قطعی جواب دینے سے قاصر نظر آرہے ہیں اور حیدرآباد میٹرو ریل کے عہدیدار اس بات کا اعتراف کر رہے ہیں کہ پرانے شہر میں میٹرو ریل چلانے اور اس کے تعمیراتی کاموں کے متعلق تاحال کوئی قطعی فیصلہ نہیں کیا گیا ہے۔ حیدرآباد میٹرو ریل کے ابتدائی منصوبہ کے مطابق جوبلی بس اسٹیشن تا فلک نما ریلوے اسٹیشن میٹرو ریل کی شروعات کا فیصلہ کیا کیا گیا تھا لیکن سیاسی مداخلت اور رکاوٹوں کے سبب املی بن بس اسٹیشن سے براہ دارالشفاء ‘ منڈی میر عالم‘ مغلپورہ‘ سلطان شاہی ‘ شاہ علی بنڈہ ‘ علی آباد‘ فلک نما میٹرو ریل کے تعمیراتی کا موں کا منصوبہ جوں کا توں رہ گیا اور اب یہ کہا جانے لگا ہے کہ جوبلی بس اسٹیشن سے پرانے شہر پہنچنے والی اس ریل روٹ کو املی بن بس اسٹیشن پر ہی روک دینے کا منصوبہ تیا رکیا جا رہا ہے کیونکہ پرانے شہر کے منتخبہ عوامی نمائندوں اور حکومت کے درمیان اس سلسلہ میں مذاکرات اب تک بھی نہیں ہو پائے ہیں۔پرانے شہر میں میٹرو ریل کی مخالفت کے بعد حالیہ عرصہ میں میٹرو ریل کے کاموں کے آغاز کے لئے فلک نما علاقہ کی مٹی کی جانچ کا مطالبہ کرتے ہوئے مقامی جماعت کے قائد نے یہ تاثر دیا تھا کہ وہ پراجکٹ کی مخالفت نہیں کر رہے ہیں بلکہ پراجکٹ کے عاجلانہ آغاز کا مطالبہ کر رہے ہیں لیکن جو اطلاعات موصول ہو رہی ہیں ان کے مطابق حکومت نے حیدرآباد میٹرو ریل کے عہدیداروں کو ہدایت دی ہے کہ وہ املی بن بس اسٹیشن تک کے کاموں کی عاجلانہ تکمیل کو ممکن بنائے اور اس کے آگے کے منصوبہ کو زیر التواء رکھیں ۔ سرکاری ذرائع سے ان احکامات کے موصول ہونے کے بعد کئے گئے فیصلہ کے مطابق حیدرآباد میٹرو ریل عہدیداروں نے پرانے شہر میں میٹرو ریل کے متعلق کسی بھی سرگرمیوں پر توجہ دینی بند کردی ہے ۔ واضح رہے کہ سابق میں پرانے شہر میں میٹرو ریل کی متبادل راہ کے طور پر موسی ندی کی نشاندہی کرتے ہوئے یہ کہا گیا تھا کہ جوبلی بس اسٹیشن سکندرآباد سے فلک نما راہداری میں تبدیلی لاتے ہوئے اسے املی بن بس اسٹیشن سے موسی ندی میں ہی رکھا جائے اور موسی ندی سے ہی پرانے شہر کے دیگر علاقوں تک حیدرآباد میٹرو ریل کے کاموں کا آغاز کیا جائے۔

TOPPOPULARRECENT