Wednesday , August 23 2017
Home / شہر کی خبریں / پرانے شہر کے بیشتر مسلمان غربت کا شکار قرض کا بے تحاشہ بوجھ

پرانے شہر کے بیشتر مسلمان غربت کا شکار قرض کا بے تحاشہ بوجھ

خطہ غربت سے نیچے زندگی گذارنے والے بے شمار مسائل سے دوچار ، این جی او کا سروے
حیدرآباد /12 مئی ( سیاست نیوز ) شہر کی ایک این جی او نے جس نے ہیلپنگ ہینڈ فاؤنڈیشن کے تحت پرانے شہر میں مسلمانوں کی معاشی حالات پر سروے کروایا ہے ۔ اس سروے کے تحت پتہ چلا ہے کہ پرانے شہر میں رہنے والے بیشتر مسلمانوں کی معاشی ، سماجی حالت ابتر ہے ۔ اس کے علاوہ غربت کا شکار مسلمانوں کی صحت بھی ابتر ہو رہی ہے ۔ پرانے شہر میں مسلم آبادی کی معیشت کا جائزہ لیا گیا تو پتہ چلا کہ یہاں کے مسلمانوں کی اکثریت غربت کے شکار ہونے کے علاوہ محتلف عنوانات سے قرضوں کے بوجھ میں بھی مبتلا ہیں ۔ 2 مئی کو شروع کردہ اس سروے میں ساؤتھ زون کے پورے علاقہ کا احاطہ کیا گیا اور 5000 افراد سے انٹرویو لیا گیا ۔ ہیلپنگ ہینڈ فاؤنڈیشن کے بانی مجتبی عسکری کے مطابق این جی او نے پرانے شہر میں مسلمانوں کی معاشی صورتحال کے علاوہ ان کی صحت سے متعلق مختلف مسائل کا بھی جائزہ لیا ہے ۔ جو لوگ قرض کے بوجھ میں مبتلا ہے وہ معاشی طور پر کمزور ہونے کے علاوہ جسمانی طور پر بھی کئی امراض کا شکار ہیں ۔ ابتدائی طور پر حاصل کردہ ڈاٹا کے مطابق پرانے شہر کے مسلم آبادی والے علاقوں میں خاصکر اربن سلم علاقوں کے عوام خطہ غربت سے نیچے زندگی گذار رہے ہیں ۔ ان پر قرضوں کا بوجھ بھی ہے ۔ مجتبی عسکری نے کہا کہ غربت اور صحت کی خرابی نے کئی خاندانوں کو مختلف مسائل میں مبتلا کردیا ہے ۔ ان کی معیار زندگی افسوسناک حد تک ابتر ہے ۔ تعلیم روزگار خواتین کو بااختیار بنانے جیسے دعوے یہاں کھوکلے نظر آتے ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT