Wednesday , October 18 2017
Home / جرائم و حادثات / پرانے شہر کے نوجوان پر نظام آباد میں اشرار کا حملہ

پرانے شہر کے نوجوان پر نظام آباد میں اشرار کا حملہ

غیر مسلم لڑکی سے عشق کا شاخسانہ ۔ شدید زخمی حالت میں شہر منتقل
نظام آباد 5 اکتوبر ( سیاست نیوز ) نظام آباد میں پرانے شہر حیدرآباد کا ایک مسلم نوجوان سنگھ پریوار کے غنڈہ عناصر کے حملے میں زخمی ہوگیا ۔ تفصیلات کے بموجب 20 سالہ نوجوان محمد عظیم دھوبی گھاٹ یاقوت پورہ سے تعلق رکھتا ہے ۔ وہ نظام آباد کے ناگارام سے تعلق رکھنے والی اسنیہا نامی لڑکی سے محبت کرتا تھا ۔ ایک سال قبل حیدرآباد میں ہوئی ملاقات عشق میں تبدیل ہوگئی ۔ کل رات فون پر بات چیت کے دوران اسنیہا نے نظام آباد آنے کی خواہش کی تھی جس پر آج یہ شام چار بجے نظام آباد پہنچ کر اسنہا سے ملاقات کی اور کنٹیشور میں ایک ہوٹل میں کھانا کھارہے تھے کہ سنگھ پریوار سے تعلق رکھنے والے 7 افراد عظیم کے پاس پہونچے اور بات چیت کے بہانے اسے گری راج کالج علاقہ میں لے گئے اور اسے ہتھوڑی اور راڈوں سے بری طرح مار پیٹ کی اور ہتھوڑی سے سر پر وار کرنے کی وجہ سے وہ بری طرح زخمی ہوگیا ۔ مارپیٹ کے بعد چندر شیکھر کالونی میں چھوڑ دیا گیا ۔ زخمی حالت میں مجلس بچائو تحریک کے کارکن سید ابراہیم علی، شہواز نے اسے دیکھ کر سرکاری دواخانہ منتقل کیا اور IIIٹائون پولیس کو اطلاع دی ۔ سرکل انسپکٹر نظام آباد ٹائون سبھاش چندرا بوس نے یہاں پہنچ کر حالات کا جائزہ لیا اور زخمی محمد عظیم سے بات چیت کی۔ حالت تشویشناک ہونے پر عثمانیہ ہاسپٹل منتقل کیا۔ مجلس بچائو تحریک کے ترجمان امجد اللہ خان نے پولیس عہدیداروں سے فون پر بات کی اور سنگھ پریوار کے کارکنوں کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا۔ سرکل انسپکٹر ٹائون سبھاش چندر بوس نے بتایا کہ لڑکی کا تعلق نظام آباد ناگارام سے ہے ۔ پولیس سی سی ٹی وی فوٹیج کی تحقیقات کررہی ہے ۔حملہ آوروں کی کوئی شناخت نہیں ہوسکی۔

TOPPOPULARRECENT