Saturday , September 23 2017
Home / کھیل کی خبریں / پرعزم دہلی کا آج گجرات لائینس سے اہم مقابلہ

پرعزم دہلی کا آج گجرات لائینس سے اہم مقابلہ

کپتان ظہیرخان اور حریف اوپنر مکالم کے درمیان دلچسپ ٹکراؤ متوقع
نئی دہلی ۔ 26 اپریل ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) شاندار مظاہروں کے ذریعہ سب کو متاثر کرنے والی آئی پی ایل کی ٹیم دہلی ڈیرڈیولس کل اپنے اگلے مقابلے میں ٹورنمنٹ کی غیرمتوقع شاندار ٹیم گجرات لائینس کے خلاف فیروز شاہ کوٹلہ اسٹیڈیم میں اہم کامیابی کیلئے پرعزم ہے۔ ٹورنمنٹ میں ٹیموں کے جدول میں گجرات لائینس پانچ مقابلوں میں 4 فتوحات کے ذریعہ دوسرے مقام پر فائز ہے جبکہ دہلی ڈیر ڈیولس 4 مقابلوں میں 3 فتوحات کے ذریعہ تیسرے مقام پر فائز ہیں ۔ اس طرح گجرات لائینس کیخلاف کامیابی کے ذریعہ نہ صرف ظہیرخان کے زیرقیادت دہلی کے ٹیم کے کھلاڑیوں کے حوصلے مزید بلند ہوں گے بلکہ ٹیموں کے جدول میں ٹیم کا موقف بھی مزید مستحکم ہوگا ۔ دوسری جانب گجرات لائینس بھی تادم تحریر ٹیموں کے جدول میں ایک کامیابی کے ذریعہ پہلے مقام پر دوبارہ فائز ہونے کیلئے کوشاں ہوگی ۔ گجرات کی ٹیم کاغذ پر بہترین ناموں کپتان سریش رائنا ، رویندر جڈیجہ ، خطرناک اوپنرس کی جوڑی آرون فنچ اور برینڈن میکالم کے علاوہ ڈیون براؤو ، ڈیل اسٹین ، دنیش کارتک ، جیمس فالکنر اور ڈیون اسمتھ کے ذریعہ انتہائی خطرناک دکھائی دیتی ہے ۔ ان کھلاڑیوں کو دیگر ہندوستانی کھلاڑیوں پروین تمبی ، پروین کمار اور اکش دیپ ناتھ کا بہتر تعاون حاصل ہورہا ہے ۔ گجرات لائینس اگر قطعی 11کھلاڑیوں میں کوئی تبدیلی کا منصوبہ رکھتی ہے تو وہ شاداب جگتی کو پھر موقع دے سکتی ہے ، حالانکہ گزشتہ چند مقابلوں میں وہ جدوجہد کرتے رہے لیکن شاداب ٹیم کو کامیابی دلوانے والی صلاحیت کے حامل کھلاڑی ہیں ۔

دوسری جانب ظہیرخان کی قیادت میں دہلی ڈیرڈیولس کی ٹیم خود کو دستیاب وسائل کا ٹورنمنٹ کی دیگر ٹیموں سے بہتر استعمال کررہی ہے ۔ دہلی کیلئے جنوبی افریقی ٹیم کے کوئنٹن ڈیکاک کی بحیثیت اوپنر خدمات دستیاب ہیں جوکہ تیز رفتار بیٹنگ کرنے کے علاوہ ایک طویل اننگز بھی کھیلنے کی صلاحیت رکھتے ہیں جس کا انھوں نے رائل چیلنجرس بنگلور کے خلاف ٹیم کو کامیابی دلوانے والی سنچری کے ساتھ ثبوت دیا ہے ۔ دہلی کیلئے مقامی کھلاڑیوں میں شریاس آئیر ، ترون نیر ، سنجیو سامسن ، پون نیاگی اور میانک اگروال کی خدمات دستیاب ہیں لہذا قطعی 11کھلاڑیوں میں شامل کئے جانے والے 7 ہندوستانی کھلاڑیوں کے متعلق ظہیرخان کو زیادہ مسائل کا سامنا نہیں ہے ۔ شریاس جن کا ٹورنمنٹ کے آغاز پر مظاہرہ ناقص تھا لیکن گزشتہ مقابلہ میں انھوں نے کچھ دیر وکٹ پر ٹھہرتے ہوئے اپنا فام حاصل کرنے کی کامیاب کوشش کی ہے ۔ دریں اثناء دہلی کے سینئر کھلاڑیوں نے بھی مایوس نہیں کیا ہے جیسا کہ جے پی ڈومنی نے گزشتہ مقابلہ میں 49 رنز اسکور کرتے ہوئے میڈل آرڈر میں اپنی طاقت بتائی ہے ۔ محمد سمیع اور امیت مشرا کے مظاہرے بھی اطمینان بخش اور قابل ستائش ہیں۔ کپتان ظہیرخان نئی گیند سے ماضی کی طرح خطرناک نہ صحیح لیکن میدان پر ان کی موجودگی ٹیم کیلئے کافی سودمند ثابت ہورہی ہے ۔ کارلوس براتھ ویٹ ، کرس مورس ، عمران طاہر ، نیتھن کلٹرنائی اور سامبلینگس ایسے بیرونی کھلاڑی ہیں جن میں کسی کو بھی کسی بھی وقت منتخب کیا جاسکتا ہے اور تقریباً سبھی کھلاڑی ٹیم کو تنہا کامیابی دلوانے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ کل کا مقابلہ چوں کہ فیروزشاہ کوٹلہ میدان پر کھیلا جارہا ہے لہذا دہلی ڈیرڈیولس گھریلو میدان پر پراعتماد مظاہرہ کرتے ہوئے کامیابی کیلئے کوشاں ہوگی ۔

TOPPOPULARRECENT