Tuesday , October 24 2017
Home / پاکستان / پرل کے قاتل کو چھڑانے کی کوشش ناکام ، 97 گرفتار

پرل کے قاتل کو چھڑانے کی کوشش ناکام ، 97 گرفتار

پاکستان میں عسکریت پسند جیل توڑنے میں کامیاب نہ ہوئے
کراچی۔ 12 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان آرمی نے آج لگ بھگ 100 عسکریت پسندوں کی گرفتاری اور القاعدہ کے سرکردہ دہشت گرد احمد عمر سعید شیخ کو آزاد کرانے کیلئے جیل توڑنے کی کوشش ناکام بنادیئے جانے کا اعلان کیا۔ اس دہشت گرد کو وال اسٹریٹ کے جرنلسٹ ڈانیل پرل کے 2002ء میں پیش آئے قتل کیلئے سزائے موت سنائی جاچکی ہے۔ فوجی ترجمان لیفٹننٹ جنرل عاصم سلیم باجوا نے کہاکہ سرکردہ دہشت گرد نیٹ ورکس جیسے ہندوستانی برصغیر میں سرگرم القاعدہ، لشکر جھنگوی اور تحریک طالبان پاکستان سے تعلق رکھنے والے عسکریت پسندوں نے اس ملک میں دہشت گردانہ حملے انجام دینے کیلئے جوائنٹ ٹاسک ٹیم تشکیل دی تھی۔ ہم اس نتیجہ پر پہنچے ہیں کہ یہ تمام دہشت گرد گروپ ایک دوسرے سے تعاون کی کوشش میں تھے تاکہ حملے کئے جاسکیں۔ باجوا نے کہا کہ جملہ 97 دہشت گرد پاکستان کے سب سے بڑے شہر کراچی میں گرفتار کئے گئے ۔ یہ تمام کئی بڑے حملوں میں ملوث رہے ہیں، جن میں مہران فضائی اڈہ ، جناح ایرپورٹ، پی اے ایف بیس بمقام کامرا اور کئی دیگر حملے شامل ہیں۔ یہ گرفتار شدہ عسکریت پسند صوبہ سندھ کی حیدرآباد جیل کو توڑنے کی منصوبہ بندی کررہے تھے تاکہ القاعدہ کے لیڈر عمر شیخ کو رہا کرا سکیں، جسے 38 سالہ پرل کے قتل کیلئے سزائے موت سنائی گئی ہے۔ پرل وال اسٹریٹ جرنل کا ساوتھ ایشیاء بیورو چیف تھا اور وہ ملک کی جاسوسی ایجنسی آئی ایس آئی اور القاعدہ کے درمیان مبینہ روابط کے بارے میں تحقیقاتی مضمون کی تیاری کے دوران ہلاک ہوگیا۔

TOPPOPULARRECENT