Tuesday , September 26 2017
Home / اضلاع کی خبریں / پروفیسر کلبرگی کے قتل کے بعد بطور احتجاج چھ ادباء نے ایوارڈ لوٹا دیے

پروفیسر کلبرگی کے قتل کے بعد بطور احتجاج چھ ادباء نے ایوارڈ لوٹا دیے

گلبرگہ۔/9ستمبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) بی ایم ٹی سی کی جانب سے باوقار ارگو ملیگے نامی معروف ایوارڈ کے حاملین چھ کنڑی ادب کے ادبا نے فیصلہ کیا ہے کہ وہ اپنے ایوارڈ حکومت کو لوٹائیں گے اور اس طرح پروفیسر ایم ایم کلبرگی جنھیں انتہائی بے رحمی سے چند نامعلوم قاتلوں نے اسی ماہ کی ابتدائی تاریخوں میں ہلاک کیا تھا کے خلاف احتجاج کریںگے۔انھوں نے ایک مشترکہ بیان میں جس کی ایک نقل حکومت اور پریس کو بھی جاری کی گئی ہے، حکومت سے اپیل کی ہے کہ وہ ڈاکٹر کلبرگی کے قاتلوں کا جلد از جلد پتہ لگا کر انھیں گرفتار کر لے، اگر 30دسمبر تک قاتلوں کی گرفتاری عمل میں نہیں آتی ہے تو پھر معاملہ کو سی او ڈی سے نکال کر سی بی آئی کے حوالے کر دیا جائے۔ان چھ کنڑی ادبا میں ویرانا مدیوال،ستیش جوارے گوڑا،سنگمیش میناسکائی،ہنومنت ہلگیری،سری دیوی آلور اور چدانند سالی ہیں۔معروف کنڑی ادیب چندر شیکھر پاٹل نے ڈاکٹر کلبرگی کے قتل کے خلاف اپنا پمپا ایوارڈ اور تین لاکھ روپیوں کا چیک حکومت کو لوٹا دیا ہے۔

گوداوری ندی میں بھینسہ کا
نوجوان غرقاب
مدہول۔/9ستمبر، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) مدہول منڈل کے موضع باسر میں گوداوری ندی میں بھینسہ کا ایک نوجوان غرقاب ہوگیا۔ باسر پولیس کی اطلاع کے مطابق شیخ اظہر ولد شیخ احمد پاشاہ ساکن اویسی نگر بھینسہ جو پیشہ سے مستری تھا اور وہ کچھ دن باسر میں سڑک کی تعمیر کے کام کررہا تھا جبکہ آج دوپہر نہانے کیلئے گوداوری ندی گیا۔ نہانے کے دوران پانی میں غرق ہوگیا۔ باسر پولیس کو اس واقعہ کی اطلاع ملتے ہی وہ مقام حادثہ پہنچ گئی اور ندی سے نعش کو باہر نکالا اور پنچنامہ کیا۔ پوسٹ مارٹم کی غرض سے ایریا ہاسپٹل بھینسہ منتقل کیا گیا بعد پوسٹ مارٹم نعش کو ورثاء کے حوالے کردیا۔

TOPPOPULARRECENT