Friday , September 22 2017
Home / شہر کی خبریں / پرگی قتل کیس کی اعلی سطحی تحقیقات کیلئے اقلیتی کمیشن سے نمائندگی

پرگی قتل کیس کی اعلی سطحی تحقیقات کیلئے اقلیتی کمیشن سے نمائندگی

امجد اللہ خالد کی قیادت میں پرگی کے مسلمانوں کی صدر نشین عابد رسول خان کو یادداشت
حیدرآباد /12 جنوری ( سیاست نیوز ) پرگی قتل کیس کی اعلی سطحی تحقیقات کا مطالبہ کرتے ہوئے آج مقامی مسلمانوں کے ایک وفد نے ریاستی اقلیتی کمیشن سے درخواست کی ۔ متولی درگاہ حضرت سید شاہ زین العابدین حسینی چشتی القادری المعروف قطب آنند پور سید شجاع الدین چشتی کا اشرار نے معمولی بات کے بعد بے رحمی سے قتل کردیا تھا اور اس حملہ میں متولی کے افراد خاندان بھی زخمی ہوئے تھے ۔ فرقہ وارانہ نوعیت کے اس منظم قتل کیس کی جامع تحقیقات اور خاطیوں کو گرفتاری میں پولیس ٹال مٹول کر رہی ہے ۔ پرگی منڈل میں اقلیتوں پر حملہ کے متعدد واقعات پر تشویش ظاہر کرتے ہوئے مقامی مسلمانوں کے ایک وفد نے جس کی قیادت قائد مجلس بچاؤ تحریک امجد اللہ خان خالد کر رہے تھے آج ریاستی اقلیتی کمیشن سے ملاقات کی اور چیرمین جناب عابد رسول خان کو یادداشت پیش کرکے علاقہ میں جاری اقلیتوں پر حملہ اور منظم سازش کے متعلق کمیشن کو واقف کروایا ۔ جس پر کمیشن نے وفد کو یقین دلایا کہ وہ اس مسئلہ پر فوری و موثر اقدامات کیلئے سفارش کریں گے اور یہ اقلیتوں پر حملوں کے واقعات کی روک تھام اور ٹھوس اقدامات کیلئے اعلی سطح تحقیقات کروائی جائیگی ۔ وفد نے کمیشن سے درخواست کی کہ وہ مقامی پولیس کے بجائے سی آئی ڈی کے ذریعہ تحقیقات کروائے ۔ بعد ازاں وفد میں شامل افراد اور امجد اللہ خان خالد نے بتایا کہ ان علاقوں پر مسلمانوں پر منظم حملے کئے جارہے ہیں اور باضابطہ ایک ایکشن ٹیم تیار کی گئی ہے تاکہ اقلیتوں کو حملوں کا نشانہ بنایا جاسکے ۔ وفد میں شامل ارکان نے بتایا کہ سال 2015 سے یہ حملوں کے سلسلہ جاری ہیں اوراب تک کئی قتل کردئے گئے اور ایک مسلم لڑکی سے دست درازی بھی کی گئی ۔ بومپلی سلطان پور اور اب آنند پور میں مسلم اقلیت کو نشانہ بنایا جارہا ہے اور ان حملوں کے خلاف معمولی کارروائی اور ضمانت کے بعد اشرار کے حوصلے بلند ہو رہے ہیں ۔ ان علاقوں میں اشرار کا ایک گروپ ایکشن ٹیم کی شکل اختیار کرگیا ہے اور یہ مثال متولی کے قتل میں دیکھنے میں آئی معمولی بات پر جھگڑے کے بعد متولی کے خاندان پر درجنوں افراد کا ایک گروپ حملہ آوار ہوگیا ۔ تعجب ہے کہ پولیس خاطیوں کی گرفتاری میں ٹال مٹول کررہی ہے ۔ وفد نے بتایا کہ فرقہ وارانہ ماحول پیدا کرکے اقلیتوں کو علاقہ خالی کرنے کیلئے مجبور کیا جارہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پرگی منڈل کو آر ایس ایس اور اس سے ملحقہ تنظیموں کی لیبارٹری کے طور پر تیار کیا جارہا ہے جو تشویش ناک اور تلنگانہ کی گنگا جمنی تہذیب اور سالمیت کیلئے خطرناک ہے ۔ اس وفد میں محمد یوسف صدر المساجد ہوگی ۔ محمد جعفر صدر المساجد آنند پور ، محمد اکبر حسین سید منور حسین وارڈ ممبرس پرگی ۔ سید اشراف حسین محمد محمود ایم اے شاہد ، محمد ریاض الدین ، محمد شبیر اور سید چاند پاشاہ اور دیگر موجود تھے ۔

TOPPOPULARRECENT