Thursday , August 17 2017
Home / Top Stories / پری پیڈ برقی میٹرس نصب کرنے کی تیاری

پری پیڈ برقی میٹرس نصب کرنے کی تیاری

سرکاری دفاتر سے شروعات ، برقی سرقہ اور بے جا استعمال پر روک
حیدرآباد ۔ 26 ۔ اکٹوبر : ( سیاست نیوز ) : حکومت تلنگانہ نے ریاست میں برقی کے سرقہ اور اس کے بیجا استعمال کو روکنے کی خاطر پری پیڈ الیکٹرسٹی میٹرس نصب کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ تجربات کے طور پر پہلے مرحلے میں سرکاری دفاتر سے شروعات کی جائے گی ۔ 26 ہزار پری پیڈ الیکٹرسٹی میٹرس حاصل کرنے کی منظوری بھی دے دی گئی ہے ۔ موبائل ٹیلی فونس کی طرح اب گھروں کے برقی میٹرس کو بھی چارج اور ری چارج کرپائیں گے ۔ اگر آپ کے میٹر میں رقم ختم ہوجائے گی تو سمجھئے کہ آپ کے گھر میں برقی سربراہی بھی مسدود ہوجائے گی ۔ دو دن قبل چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر نے محکمہ برقی کے اعلیٰ عہدیداروں کا اجلاس طلب کرتے ہوئے ریاست میں برقی کی پیداوار اور طلب کا جائزہ لیا ہے ۔ برقی بچت کو یقینی بنانے اور نقصانات کو گھٹانے کے مختلف پہلوؤں پر غور کیا گیا ۔ برقی چوری کی روک تھام کے لیے سائنٹفک طریقہ اپنانے سے اتفاق کیا گیا ۔ پڑوسی ریاستیں مہاراشٹرا ، اترپردیش ، اروناچل پردیش کے علاوہ دیگر ریاستوں میں برقی بچت کے لیے کیے جانے والے اقدامات کا جائزہ لیتے ہوئے دو اہم فیصلے کیے ہیں ۔ ایل ای ڈی بلبس لگانے اور ساتھ ہی برقی میٹرس کو پری پیڈ برقی میٹرس میں تبدیل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ۔ باوثوق ذرائع سے پتہ چلا ہے کہ اجلاس میں برقی نقصانات پر قابو پانے بچت کو یقینی بنانے اور ضرورت سے زیادہ برقی استعمال کرنے والوں کو بھی احساس دلانے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ ریاست تلنگانہ میں گھریلو صارفین ، صنعتی ادارے اور کاروباری افراد پہلے برقی استعمال کرتے ہیں اور ہر ماہ بلز ادا کرتے ہیں ۔

 

شادی بیاہ و دیگر تقاریب کے لیے ضروریات سے زیادہ برقی استعمال کیا جاتا ہے ۔ اگر برقی میٹرس کو پری پیڈ میٹرس میں تبدیل کرنے کی صورت میں پری پیڈ کارڈ میں جتنی رقم ہوگی اتنی ہی برقی استعمال کرنے کی گنجائش فراہم ہوگی ۔ پری پیڈ کارڈ میں رقم ختم ہوتے ہی برقی سربراہی مسدود ہوجائے گی ۔ پری پیڈ برقی میٹرس کی تنصیب کے بعد صنعتی ادارے اور گھریلو صارفین احتیاط سے برقی کا استعمال کریں گے ۔ پہلے مرحلے میں پری پیڈ برقی میٹرس کو سرکاری دفاتر میں نصب کیا جائے گا اور چار کمپنیوں نے پری پیڈ میٹرس نصب کرنے کا پیشکش کیا ہے ۔ 26 ہزار پری پیڈ میٹرس کے آرڈرس دے دئیے گئے ہیں ۔ سرکاری دفاتر میں تجربہ کی کامیابی کے بعد صنعتی وکاروباری ادارے اور گھریلو صارفین کو بھی ان میٹرس کے استعمال کو لازمی کردیا جائے گا ۔ برقی استعمال کرنے والے کو آن لائن یا کوپن کے ذریعہ ری چارج کی سہولت فراہم کی جائے گی ۔ اس نئے نظام کے متعارف کرانے سے محکمہ برقی میں عملے کا بوجھ کم ہوگا اور معیاری برقی سربراہ ہوگی اور برقی بلز کی ادائیگی کے لیے صارفین کے اطراف دوڑ دھوپ کرنے کی روایت بھی ختم ہوجائے گی ۔۔

TOPPOPULARRECENT