Saturday , August 19 2017
Home / شہر کی خبریں / پسماندہ طبقات کو حصول اقتدار کی کوشش کا مشورہ

پسماندہ طبقات کو حصول اقتدار کی کوشش کا مشورہ

ملک کی آبادی کا صرف 7 فیصد لوگوں کو اقتدار سونپنا حیرت انگیز
حیدرآباد۔6ڈسمبر(سیاست نیوز) انقلابی گلوکار غدر نے کہاکہ آزادی کے بعد سے لیکر اب تک قومی سطح پر پسماندہ طبقات جن کی آبادی کا تناسب 93فیصد ہے صرف سات فیصد آبادی والے لوگوں کو اقتدار پر فائز کرتے رہے مگر اب وقت ہے کہ پسماندہ طبقات متحد ہوکر اقتدار حاصل کرنے کی کوشش کریں جو ان کا جمہوری حق ہے۔ آج یہاں ایس وی کیندرم میں ساما جیکہ تلنگانہ کے زیراہتمام منعقدہ گول میز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے غدر نے کہاکہ سات فیصد آبادی والے لوگو ں کواقتدار پر فائز کرنے کے بجائے ہم خود آگے بڑھکرحکومت کیوں نہیںکرتے۔ انہوں نے کہاکہ موجودہ حالات میں کسی نئی سیاسی جماعت کی تشکیل کامیاب اقدام ثابت نہیںہوگا ۔ اپنی اپنی پارٹیوں میںرہ کر پسماندہ طبقات کا ایک محاذ تیار کرتے ہوئے اس نئے انقلاب کی شروعات سے تلنگانہ کی جاسکتی ہے ۔ انہوںنے کہاکہ ریاست تلنگانہ میں پسماندہ طبقات کی آبادی کا تناسب 93فیصد ہونے کے باوجود ہم کبھی اقتدار حاصل نہیںکرسکے۔انہوں نے کہاکہ تین اور چار فیصد آبادی کا تناسب رکھنے والے طبقات چیف منسٹر اور وزراء بنے اور ہمارا استحصال کیا۔ انہوں نے کہاکہ ہم اس بار کا تحریک کے ساتھ عزم لیکر اٹھیں کہ ہم جہاں بھی اس تحریک کے ساتھ جائیں گے وہاں پر خود کو پسماندہ طبقات کا نمائندے کی طور پر پیش کریں خواہ وہ دلت ہو ‘ اقلیتی طبقے سے تعلق رکھنے والا ہویاپھر قبائیلی ہووہ خود کو صرف پسماندہ طبقے سے تعلق رکھنا والے طور پر پیش کریں۔ غدر نے کہاکہ ہم ریاست کی تمام سیاسی جماعتوں سے کہتے ہیںکہ ہمیںکچھ نہیںچاہئے ہم93فیصد ہیں اور اتنے بڑے طبقے کی نمائندگی کے لئے ہمیںصرف ایک چیف منسٹر کا عہدہ دیں اور اقتدار کے تمام عہدے صرف سات فیصد طبقے کی نمائندگی کرنے والوں اپنے قبضے میںرکھ لیں۔انہوں نے کہاکہ اس عزم کے ساتھ آپ یہ نعرے لے کر اٹھیںاور دیکھیں کس طرح ریاست کی تمام سیاسی جماعتوں میںانقلاب برپا ہوتا ہے ۔ غدر نے کہاکہ پسماندہ طبقات کے متحدہ پلیٹ فارم کی تشکیل کے لئے کی جانے والی ہر کوشش میں وہ ہرممکن تعاون کریںگے۔ کانگریس قائد ملو روی ‘ پروفیسر گالی ونود کمار‘ شردھا گوڑ ایڈوکیٹ اور دیگر نے بھی اس کانفرنس سے خطاب کیا۔

TOPPOPULARRECENT