Saturday , September 23 2017
Home / ہندوستان / پناما پیپرس انکشاف ‘ 500 ہندوستانیوں کا بیرونی ملکوں میں کالا دھن

پناما پیپرس انکشاف ‘ 500 ہندوستانیوں کا بیرونی ملکوں میں کالا دھن

کئی ایجنسیوں کے ذریعہ تحقیقات کا اشارہ ۔ مکمل تفصیلات حاصل کرنے عالمی اداروں سے ربط
نئی دہلی 4 اپریل ( سیاست ڈاٹ کام ) افشا ہوئے پناما پیپرس میں جن 500 ہندوستانیوں کے نام بیرونی ممالک میں کالا دھن رکھنے کے معاملہ میں سامنے آئے ہیں ان کی نگرانی اور تحقیقات کالے دھن سے نمٹنے حال میں تیار ہوئے انتہائی سخت قانون کے تحت ہوگی ۔ کہا گیا ہے کہ تقریبا 500 ہندوستانیوں کے نام ’ پناما پیپرس ‘ میں سامنے آئیں ہیں جو بیرونی ممالک میں کثیر کالا دھن رکھتے ہیں۔ عہدیداروں نے کہا کہ سنٹرل بورڈ فار ڈائرکٹ ٹیکسیس کی تحقیقاتی ونگ کئی ایجنسیوں کے تعاون سے تحقیقات کی نگرانی کریگی ۔ عہدیداروں کے بموجب بیرونی فنڈز پر ٹیکس سے متعلق ونگ ‘ آر بی آئی اور معاشی انٹلی جنس یونٹ کی جانب سے بھی ان نئے انکشافات کی جامع تحقیقات ہونگی ۔ انسداد کالا دھن قانون گذشتہ سال تیار ہوا تھا اور اس پر یکم جولائی سے عمل آوری ہو رہی ہے ۔ عہدیداروں نے بتایا کہ یہ کام کالے دھن پر خصوصی تحقیقاتی ٹیم کی جانب سے انٹرنیشنل کنسورشیم آف انویسٹی گیٹیو جرنلسٹس ( آئی سی آئی جے ) کو مکتوب تحریر کرنے سے شروع ہوگا جس میں کہا جائیگا کہ وہ پناما پیپرس افشا میں ہندوستانیوں کے تعلق سے مکمل تفصیلات حاصل کریں۔ اسی صورت میں یہ واضح ہوگا کہ کتنی رقم ہے اور کس حد تک قانون کی خلاف ورزیاں کی گئی ہیں اور ٹیکس چوری کیا گیا ہے ۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ اس سلسلہ میں کچھ اطلاعات ہیں ۔ ہمہ ایجنسی تحقیقات کا آغاز ہو رہا ہے اور مزید تفصیلات حاصل کی جا رہی ہیں۔ اس کیس میں تحقیقات اور امکانی قانونی کارروائی نئے انسداد کالا دھن قانون کی دفعات کے تحت کی جائیگی ۔ اب تک بیرونی ممالک میں غیر قانونی اثاثہ جات سے متعلق معاملات سے انکم ٹیکس ایکٹ 1961 کے تحت نمٹا جاتا تھا ۔

TOPPOPULARRECENT