Tuesday , August 22 2017
Home / Top Stories / پناما پیپرس : خاطی ثابت ہونے پر استعفیٰ کا نواز شریف کا پیشکش

پناما پیپرس : خاطی ثابت ہونے پر استعفیٰ کا نواز شریف کا پیشکش

اسلام آباد ۔ 22 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان کے پریشان حال وزیراعظم نواز شریف نے آج عہد کیا کہ اگر وہ دھوکہ دہی یا غبن کے اعلیٰ سطحی تحقیقات میں خاطی ثابت ہوجائیں تو اپنے عہدہ سے مستعفی ہوجائیں گے۔ انہوں نے پناما پیپر لیگس کے پس منظر میں یہ بیان دیا ہے۔ پناما پیپرس کے بموجب ان کے بچے بیرون ملک تین کمپنیوں کے مالک ہیں۔ روزنامہ دی نیشن کو خطاب کرتے ہوئے جس میں پناما پیپرس کی خبر شائع ہوئی ہے نواز شریف نے عہد کیا کہ وہ ان تمام کو چیلنج کرتے ہیں جنہوں نے ان پر ٹیکس دھوکہ دہی مقدمہ عائد کیا ہے کہ وہ آگے آئیں اور ثبوت پیش کریں۔ اگر ان پر عائد الزامات ثابت ہوجائیں تو وہ فوری مستعفی ہوجائیں گے۔ یہ جاریہ ماہ ان کی اس قسم کی دوسری تقریر تھی۔ ان کے چار بچے دو بیٹے اور ایک بیٹی مبینہ طور پر بیرون ملک کمپنیوں کے مالک ہیں۔ جیسا کہ پناما پیپرس کے افشاء میں انکشاف کیا گیا ہے۔ مبینہ پناما پیپرس کو جاریہ ماہ کے اوائل میں برسرعام پیش کیا گیا تھا۔ ان میں دعویٰ کیا گیا ہیکہ سرکاری عہدیداروں کے بیرون ملک سودوں کو بے نقاب کیا گیا ہے۔ ان پیپرس میں تقریباً 140 سیاسی شخصیتوں کے نام بھی ہیں۔ نواز شریف اور انکی شریک حیات کی جملہ جائیداد کا تخمینہ تقریباً 2 ارب روپئے ہے۔ گذشتہ چار سال میں اس میں نمایاں اضافہ ہوا ہے۔ تاہم نواز شریف ایسا معلوم ہوتا ہیکہ بیرون ملک کسی جائیداد کے مالک نہیں ہیں۔ انہوں نے الیکشن کمیشن کو اپنے اثاثہ جات کی تفصیل پیش کی تھی جس میں انہوں نے حلفیہ طور پر اپنے اثاثہ جات کی مالیت کے بارے میں بیان دیا ہے۔ نواز شریف کے مخالفین ان پر دباؤ ڈالنے کیلئے اس موقع کا استحصال کررہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT