Sunday , June 25 2017
Home / اداریہ / پنجاب ‘ حالات بدلنے عزم ضروری

پنجاب ‘ حالات بدلنے عزم ضروری

پہلو میں تم کو دیکھ کے یہ سوچتا ہوں میں
اب تک جو زندگی کا تقاضا تھا کیا ہوا
پنجاب ‘ حالات بدلنے عزم ضروری
پنجاب میں آج کیپٹن امریندر سنگھ کی قیادت میں کانگریس کی نئی حکومت نے حلف لے لیا ہے ۔ ریاست میں اسمبلی انتخابات میں کانگریس پارٹی کو بہترین کامیابی ملی تھی جس کے بعد کیپٹن امریندر سنگھ کی قیادت میں نئی حکومت نے اپنا حلف لے لیا ہے اور چیف منسٹر نے اپنا کام کاج بھی شروع کردیا ہے ۔ گذشتہ دس برس سے ریاست میں اکالی دل ۔ بی جے پی اتحاد کی حکومت قائم تھی اور اس دوران ریاست میں جو صورتحال پیدا ہوگئی تھی وہ انتہائی ابتر تھی ۔ ریاست پنجاب کو زرعی پیداوار کے شعبہ میں ملک کی سب سے خوشحال ریاست سمجھا جاتا تھا ۔ یہاں کی ایک مخصوص روایت رہی تھی اور سماج میں طمانیت کا احساس پایا جاتا تھا ۔ مذہبی جوش و خروش کے ساتھ ریاست میں سماجی ذمہ داریوں کی ایک دیرینہ روایت رہی تھی ۔ یہاں کے نوجوان ملک کے تقریبا تمام اہم شعبہ جات میں نمایاں خدمات انجام دینے میں سب سے آگے رہتے تھے ۔ ملک کی فوج میں سب سے زیادہ نمائندگی اسی ریاست سے ہے ۔ تاہم گذشتہ دس سال میں ریاست کی جو صورتحال ہوگئی تھی وہ انتہائی ابتر تصویر پیش کر رہی تھی ۔ یہاں ترقی کے معاملہ میں انحطاط پیدا ہوگیا تھا ۔ یہاں زرعی شعبہ میں سرگرمیاں متاثر ہوکر رہ گئی تھیں۔ یہاں پیداوار اس حد تک نہیں ہو پا رہی تھی جس کیلئے ریاست سارے ملک میں ایک منفرد مقام رکھتی تھی ۔ یہاں کے نوجوان جو ملک کی خدمت کیلئے شہرت رکھتے تھے نشہ کی لعنت کا شکار ہوگئے تھے ۔ منشیات کا کاروبار انتہائی عروج پر پہونچ گیا تھا ۔ لا اینڈ آرڈر بھی مسئلہ بن کر رہ گیا تھا ۔ ترقیاتی کام ٹھپ ہوکر رہ گئے تھے ۔ کرپشن کے الزامات مسلسل سامنے آ رہے تھے اس کے باوجود سابقہ شرومنی اکالی دل ۔ بی جے پی حکومت کی جانب سے یہاں حالات کو بہتر بنانے کیلئے کوئی موثر اور جامع اقدامات نہیں کئے گئے اور ریاست کی حالت مسلسل بگڑتی جا رہی تھی ۔ مرکز میں شرومنی اکالی دل کی حلیف بی جے پی کی حکومت آنے کے بعد بھی ریاست میں حالات کو بہتر بنانے میں کوئی مددنہیں مل سکی تھی ۔ ریاست کو معاشی میدان میں بھی خاطر خواہ ترقی دلانے میں حکومتیں ناکام رہی تھیں۔ یہ ایسی صورتحال تھی جس سے عام پنجابی عوام انتہائی بیزار ہوگئے تھے اور وہ تبدیلی کے خواہشمند تھے ۔
اسمبلی انتخابات کے ذریعہ عوام کو ریاست میں دوبارہ اپنی پسند کی حکومت منتخب کرنے کا موقع ملا تھا اور انہوں نے اس موقع سے خوب فائدہ اٹھایا ۔ یہاں اقتدار میں تبدیلی لائی گئی اور اب کانگریس نے کیپٹن امریندر سنگھ کی قیادت میں نئی حکومت قائم کی ہے ۔ کیپٹن امریندر سنگھ ریاست میں کانگریس کے سب سے طاقتور ‘ سینئر اور مقبول ترین لیڈر ہیں۔ انہیں ریاست کی سیاست کا وسیع تجربہ حاصل ہے ۔ وہ ریاست میں پہلے بھی چیف منسٹر رہ چکے ہیں۔ انہیں انتظامی امور کے ساتھ ساتھ ترقیاتی کاموں کی انجام دہی کا بھی وسیع تجربہ ہے ۔ ریاست کی جو موجودہ صورتحال ہے وہ اس بات کی متقاضی ہے کہ کیپٹن امریندر سنگھ اپنے اس وسیع تجربہ کو بروئے کار لائیں تاکہ ریاست کی نئی صورت گری ممکن ہوسکے ۔ ریاست میں جو خوشحالی اور طمانیت کی فضا ہوا کرتی تھی اسے بحال کیا جاسکے اور یہاں کے عوام ایک بار پھر ملک کے خوشحال عوام بن سکیں۔ ریاست میں زرعی سرگرمیوں کا احیاء عمل میں لانے کی ضرورت ہے ۔ یہاں منشیات کے کاروبار کو ختم کرنے اور نوجوانوں کو ان کی لعنت سے چھٹکارہ دلانے کیلئے ایک بے تکان جدوجہد کی ضرورت ہے ۔ جب تک سیاسی عزم کے ساتھ اس سلسلہ میں کوششیں نہیں کی جاتیں اس وقت تک حالات کو بدلنا ممکن نہیں ہوگا ۔ ریاست میں اس لعنت کو ختم کرنا آسان نہیں ہے لیکن یہ کیپٹن امریندر سنگھ جیسے تجربہ کار اور سینئر لیڈر کیلئے یہ ناممکن بھی نہیں کہا جاسکتا ۔ ضرورت صرف اس بات کی ہے کہ وہ ایک عزم کے ساتھ جدوجہد کریں اور اس میں سیاسی وابستگیوں کا لحاظ نہ رکھا جائے ۔
ریاست میں لا اینڈ آرڈر کو بہتر بنانے پر توجہ دی جانی چاہئے ۔ کرپشن کے خاتمہ کیلئے بھی بلا خوف اقدامات ہونے چاہئیں۔ نوجوانوں میں منشیات کی لعنت کو ختم کرتے ہوئے ایک بار پھر ملک کی خدمت کا جذبہ پروان چڑھایا جانا چاہئے ۔ یہ سارے کام راتوں رات نہیں ہوسکتے اس کیلئے ایک جہد مسلسل کی ضرورت ہے لیکن اس بات کا بھی خیال رکھا جانا چاہئے کہ ان ترجیحات کی تکمیل کیلئے حکومت کو کسی تن آسانی سے کام نہیں لینا چاہئے ۔ اسے ریاست کی نئی صورت گری کے جذبہ کے ساتھ کام کرنے کی ضرورت ہے ۔ اگر یہ بے تکان جدوجہدشروع کی جاتی ہے تو یہ بات یقین سے کہی جاسکتی ہے کہ پنجاب کو ایک بار پھر ملک کی خوشحال ترین ریاست میں تبدیل کیا جاسکتا ہے ۔ یہاں صلاحیتو ں کی کوئی کمی نہیں ہے صرف اخلاص کی ضرورت ہے ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT