Friday , August 18 2017
Home / ہندوستان / پنجاب میں نقص امن کیلئے کوشاں عناصر کو ہرسمرت کور کا انتباہ

پنجاب میں نقص امن کیلئے کوشاں عناصر کو ہرسمرت کور کا انتباہ

چیف منسٹر بادل پر جوتا پھینکنے کے واقعہ پر ردعمل، الیکشن کمیشن سے مداخلت کیلئے کانگریس کی اپیل
چندی گڑھ۔12 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) مرکزی وزیر ہرسمرت کور بادل نے چیف منسٹر پنجاب پرکاش سنگھ بادل پر لامبی میں جوتا پھینکنے کے واقعہ کی پرزور مذمت کی اور پنجابیوں سے ان عناصر کا ساتھ چھوڑ دینے کی اپیل کی جو پنجاب کے پرامن تانے بانے کو برباد کردینا چاہتے ہیں۔ وہ گزشتہ روز مانسا کے بدھ لاڑا ٹائون میں میڈیا سے بات چیت کررہی تھیں۔ انہوں نے کہا کہ میری پنجابیوں سے اپیل ہے کہ صبر و تحمل سے کام لیں اور شرپسندوں کو بادل صاحب کے حق میں ووٹ دیتے ہوئے منہ توڑ جواب دیں اور انہیں دوبارہ اقتدار دلائیں۔ مرکزی وزیر نے کہا کہ شرپسند عناصر جو کافی جدوجہد کے بعد قائم پرامن ماحول کو بگاڑ دینا چاہتے ہیں، وہ اپنی کوشش میں کبھی کامیاب نہیں ہوسکیں گے۔ میں اس بزدلانا حملے کی مذمت کرتی ہوں جو ملک کے قابل احترام سیاستدانوں میں شامل بادل صاحب پر کیا گیا۔ ساتھ ہی میں پنجابیوں سے پنجاب کے پرامن ماحول کو برباد ہونے سے بچانے کی اپیل بھی کرتی ہوں۔ مرکزی وزیر نے عام آدمی پارٹی کے سینئر لیڈر اور ایم پی بھگونت مان کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا اور انہیں جوکر قرار دیا۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ عام آدمی پارٹی عوام کو 4 فبروری کو مقررہ ریاستی اسمبلی چنائو سے قبل تشدد پر آمادہ کرنا چاہتی ہیں۔ بٹھنڈا کی ایم پی دراصل گزشتہ روز پیش آئے واقعہ کا حوالہ دے رہی تھیں جو حلقہ اسمبلی لامبی کے موضع رتا کھیرا میں پیش آیا۔

انہوں نے ایک اور واقعہ کا ذکر بھی کیا جس میں ڈپٹی چیف منسٹر سکھبیر سنگھ بادل کی گاڑیوں کے قافلے پر 8 جنوری کو فزیلکا کے حلقہ اسمبلی جلال آباد میں حملہ کیا گیا۔ انہوں نے کسی کا نام لیے بغیر برہمی کے انداز میں کہا کہ انہیں سوچنا چاہئے کہ اگر بادل صاحب اکالی ورکرس کو ان کے خلاف لاٹھیاں اٹھالینے کے لیے کہتے ہیں تو وہ کسی کو اپنا چہرا دکھانے کے لائق نہیں رہیں گے اور وہ شاید زندہ بھی نہ ہوں گے۔ تاہم آج فیس بیس بک پر وزیر موصوفہ نے میڈیا کو مورد الزام ٹھہرایا کہ وہ بعض واقعات پر سنسنی پیدا کررہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ میں پھر ایک بار اعادہ کرتی ہوں کہ بادل صاحب نے ہمیشہ امن اور فرقہ وارانہ ہم آہنگی کی تائید و حمایت کی اور شرومنی اکالی دل کا معاملہ بھی ایسا ہی ہے۔ اس دوران پردیش کانگریس سربراہ امریندر سنگھ نے ہرسمرت کے اشتعال انگیز ریمارکس کی مذمت کی اور شرومنی اکالی دل کے ساتھ ساتھ عام آدمی پارٹی کو بھی متنبہ کیا کہ تشدد بھڑکانے سے باز رہیں اور کہا کہ اس طرح کا اقدام نہ صرف الٹا پڑے گا بلکہ ریاست کو ناقابل تلافی نقصان ہوگا۔ انہوں نے الیکشن کمیشن سے بھی اپیل کی کہ اس طرح کے بیانات کا سنجیدگی سے نوٹ لیتے ہوئے سخت کارروائی شروع کی جائے۔

TOPPOPULARRECENT