Monday , September 25 2017
Home / شہر کی خبریں / پولٹری انڈسٹری بحران کا شکار

پولٹری انڈسٹری بحران کا شکار

منسوخ کرنسی استعمال کرنے کی اجازت دی جائے
حیدرآباد 20 نومبر (سیاست نیوز) پولٹری انڈسٹری نے ریاستی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ آئندہ بیس دنوں تک انڈے اور چکن کی خریدی کے لئے پرانے نوٹوں کا چلن جاری رکھنے کی اجازت دے تاکہ بحران سے نکالا جاسکے۔ پولٹری انڈسٹری کے نمائندوں نے کل سکریٹریٹ میں وزیر فینانس ایٹالہ راجندر سے اس مسئلہ پر ملاقات کی اور انھیں بتایا کہ پولٹری انڈسٹری کو ہر روز چالیس کروڑ روپئے کا نقصان ہورہا ہے کیوں کہ کرنسی بحران کی وجہ سے کوئی خریدار نہیں ہے۔ تلنگانہ پولٹری ٹریڈرس اسوسی ایشن کے صدر جی رنجیت ریڈی نے کہاکہ حکومت ٹیکس بلس اور بقایہ جات کی ادائیگی کے لئے پرانے نوٹ قبول کررہی ہے۔ اس سے حکومت اور عوام کو فائدہ ہورہا ہے۔ ایسی ہی سہولت پولٹری انڈسٹری کو بھی دی جائے کیوں کہ 9 نومبر سے کوئی خریدار نہ آنے سے پولٹری انڈسٹری شدید بحران میں ہے۔ پولٹری انڈسٹری بحران میں ہے اور قرضے ادا کرنے کے موقف میں نہیں ہے۔ تلنگانہ میں یومیہ 4 کروڑ انڈوں اور 15 لاکھ کیلو گرام چکن کا پروڈکشن ہوتا ہے جسے زیادہ دن اسٹور نہیں کیا جاسکتا۔ نتیجہ میں پولٹری پروڈکشن کو 80 فیصد نقصان ہورہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT