Friday , July 28 2017
Home / شہر کی خبریں / پولی چنتلا برقی پراجکٹ کی تاخیر کیلئے کانگریس ذمہ دار

پولی چنتلا برقی پراجکٹ کی تاخیر کیلئے کانگریس ذمہ دار

بروقت عدم تکمیل سے ایک ہزار کروڑ روپئے کا اضافی بوجھ ، ہریش راؤ
حیدرآباد۔10 جولائی (سیاست نیوز) وزیر آبپاشی ہریش رائو نے الزام عائد کیا کہ پولی چنتلا برقی پراجیکٹ کی تکمیل میں تاخیر کے لیے کانگریس پارٹی ذمہ دار ہے۔ میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے ہریش رائو نے کہا کہ اس پراجیکٹ کی مقررہ وقت پر عدم تکمیل کے باعث تلنگانہ حکومت پر مزید 1000 کروڑ روپئے کا بوجھ عائد ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ 2006ء میں اس برقی پراجیکٹ کو انتظامی منظوری حاصل ہوچکی تھی لیکن 2014ء تک سابقہ حکومتوں نے تعمیری کام کا آغاز نہیں کیا۔ تلنگانہ ریاست کے قیام کے بعد ٹی آر ایس حکومت نے برقی پلانٹ کا کام شروع کیا ہے۔ انہوں نے صدر پردیش کانگریس اتم کمار ریڈی کے اس دعوے کو مسترد کردیا کہ پولی چنتلا پاور پلانٹ کانگریس حکومت کی دین ہے۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس نے اپنے دور حکومت میں سیماندھرا علاقوں کی ترقی پر توجہ دی ہے جبکہ تلنگانہ سے تعلق رکھنے والے کانگریس قائدین خاموش تماشائی بنے رہے۔ انہوں نے کبھی بھی آندھرائی حکمرانوں کے آگے تلنگانہ کے حق میں آواز نہیں اٹھائی۔ انہوں نے کہا کہ اگر کانگریس قائدین اس پراجیکٹ کی تکمیل میں سنجیدہ ہوتے تو متحدہ آندھراپردیش کے فنڈ سے پراجیکٹ کی تکمیل ہوجاتی۔ ان کی نااہلی کے باعث پراجیکٹ کے آغاز میں تاخیر ہورئی ہے۔انہوں نے کہا کہ اگر پولی چنتلا پاور پلانٹ کو 2006ء میں مکمل کیا جاتا تو اس پر 380 کروڑ روپئے کا خرچ آتا اور اگر 2014 ء میں تکمیل کی جاتی تو خرچ 580 کروڑ کا ہوتا اور 600 ملین یونٹ برقی کی پیداوار ممکن ہوتی۔ کانگریس قائدین کی بے حسی اور عدم کارکردگی کا نتیجہ ہے کہ پراجیکٹ کی لاگت میں اضافہ ہوچکا ہے۔ ہریش رائو نے کہا کہ کانگریس قائدین اس حقیقت کو فراموش کررہے ہیں آندھرائی قائدین کے دبائو میں انہوں نے تلنگانہ کی ترقی کو نظرانداز کردیا تھا۔ ہریش رائو نے تلنگانہ کے پراجیکٹس میں کانگریس قائدین پر رکاوٹ پیدا کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ عدالتوں میں مقدمات دائر کرتے ہوئے پراجیکٹس کی راہ میں رکاوٹ پیدا کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کالیشور پراجیکٹ کے خلاف 12 مقدمات دائر کئے گئے۔ ملنا ساگر پراجیکٹ کے لیے حصول اراضی کے کام میں کانگریس رکاوٹ پیدا کررہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پراجیکٹس کی راہ میں رکاوٹ پیدا کرنا دراصل تلنگانہ سے دشمنی کے مترادف ہے اور عوام ایسی طاقتوں کو سبق سکھائیں گے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT