Tuesday , October 24 2017
Home / کھیل کی خبریں / پونے اور راجکوٹ سے آئی پی ایل کی دو نئی ٹیمیں

پونے اور راجکوٹ سے آئی پی ایل کی دو نئی ٹیمیں

معطل ٹیموں چینائی اور راجستھان کی جگہ نیو رائزنگ کنسارشیم اور موبائل فون کمپنی اِنٹکس سے کرکٹ بورڈ کی کروڑہا روپئے کی معاملتیں
نئی دہلی ، 8 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) سنجیو گوئنکا کی ملکیت والے ’نیو رائزنگ کنسارشیم‘ اور موبائل فون مینوفیکچرر ’اِنٹکس‘ آج نامی گرامی آئی پی ایل صفوں میں شامل ہوگئے جبکہ پونے اور راجکوٹ دو نئے فرنچائز بنے، جو معطل چینائی سوپر کنگس (سی ایس کے) اور راجستھان رائلز (آر آر) کی جگہ دو سالہ مدت کیلئے لیں گے۔ پونے کی فرنچائز کو کولکاتا نشین نامور بزنسمین گوئنکا کی کمپنی نیو رائزنگ نے خریدا جبکہ راجکوٹ کی بولی اِنٹکس موبائلز نے بولی کے معکوس عمل میں جیتی، جہاں یہ دونوں ٹیمیں منتخب ہوئیں۔ گوئنکا بی سی سی آئی کو 16 کروڑ روپئے فی سال دیں گے جبکہ انٹکس موبائلز دو سالہ معاملت کیلئے 10 کروڑ روپئے ادا کرے گا۔ ’’وہ بی سی سی آئی سے ایک پیسہ نہیں لیں گے۔ درحقیقت وہ بی سی سی آئی کو ادائیگی کریں گے،‘‘ بورڈ سکریٹری انوراگ ٹھاکر نے آئی پی ایل گورننگ کونسل کی میٹنگ کے بعد میڈیا کو یہ بات بتائی۔ اس میٹنگ میں آئی پی ایل کے اگلے ایڈیشن کیلئے 9 اپریل تا 29 مئی کی تواریخ کو قطعیت بھی دی گئی۔ یہ ٹیموں کو بولی لگانے کے معکوس عمل کے ذریعہ فروخت کیا گیا، جس کیلئے اساسی قیمت 40 کروڑ روپئے مقرر کی گئی اور بولی دہندگان کو اس سے کمتر رقم کی بولی لگانا تھا۔

اقل ترین بولی دہندگان کو یہ فرنچائزس دیئے گئے۔ دو نئے فرنچائز کا اعلان پریس کانفرنس میں کیا گیا جس میں صدر بی سی سی آئی ششانک منوہر، بورڈ سکریٹری ٹھاکر، آئی پی ایل چیرمین راجیو شکلا اور نئی ٹیموں کے نمائندے موجود تھے۔ تاہم سی ایس کے اور آر آر دونوں کو اُن کی معطلی کی مدت پوری ہوجانے کے بعد اس لیگ میں واپسی کی اجازت دی جائے گی۔ عبوری فرنچائزس جن کا آج انتخاب ہوا، وہ 15 ڈسمبر کو اپنے حصے کے کھلاڑیوں کی برقراری کے عمل میں حصہ لیں گے۔ پہلے پونے کو کھلاڑیوں کے انتخاب کا موقع ملے گا کیونکہ انھوں نے سب سے کم بولی لگائی۔ اس دوڑ کے دیگر تین بولی دہندگان آر پی جی پراپرٹیز کے ہرش گوئنکا،
ایکسیس کلینیکل اور چٹیناڈ سیمنٹ رہے، جو تمام نے نیو رائزنگ اور انٹکس موبائلز کے مقابل اونچی بولیاں لگائے۔ سی ایس کے اور آر آر کے کھلاڑیوں کو تاحال کھیل چکے اور بالکلیہ نئے کھلاڑیوں کے دو گروپوں میں تقسیم کیا جائے گا اور سرکردہ ناموں کا آکشن ڈرافٹ سسٹم کے ذریعہ ہوگا۔ دونوں نئی ٹیموں کو اپنے کھلاڑیوں کی خریداری کیلئے کم از کم 40 کروڑ روپئے اور زیادہ سے زیادہ 66 کروڑ روپئے دستیاب رہیں گے۔ جو کرکٹرز منتخب نہ ہوپائیں انھیں جنرل پول میں شامل کرکے نئے آکشن کیلئے دستیاب کرایا جائے گا، جو بنگلورو میں 6 فبروری کو طئے ہے۔

کوہلی کی ٹیم انڈیا کو بورڈ کا انعام
کرکٹ بورڈ نے عالمی نمبر ایک جنوبی افریقہ کے خلاف ٹسٹ سیریز میں ہندوستان کے شاندار مظاہرہ کو سراہتے ہوئے ٹیم کیلئے 2 کروڑ روپئے کے ایوارڈ کا اعلان بھی کیا۔ ویراٹ کوہلی کی ٹیم نے پروٹیز کو چار میچ کی سیریز میں 3-0 سے ہرایا۔

TOPPOPULARRECENT