Friday , August 18 2017
Home / دنیا / پوپ نے 12 مسلم پناہ گزینوں کو مہمان بنالیا

پوپ نے 12 مسلم پناہ گزینوں کو مہمان بنالیا

شام کے تین مسلم خاندانوں کو اٹلی میں پناہ ، پوپ کے خصوصی طیارہ میں سفر
موریا۔ 16 اپریل ۔(سیاست ڈاٹ کام) پوپ فرانسیس نے پناہ گزینوں کے سنگین بحران سے نمٹنے کایوروپ کو آج عملی درس دیتے ہوئے بحران سے بدترین متاثرہ یونانی جزیرہ لسبوس کے جذباتی دورہ کے موقع پر شام کے 12 مسلم پناہ گزینوں کو اپنا مہمان بنالیا اور انھیں اٹلی لیجانے کیلئے اپنے خصوصی طیارہ میں سوار کروالیا ۔ ویٹکن سٹی نے کہا ہے کہ شامی مسلمانوں کے ان تین خاندانوں میں چھ بچے بھی شامل ہیں جنھیں ایک ادارہ ’’ہولی سی ‘ مدد پہونچائے گی اور اٹلی کی کیتھولک سینٹ ایجیڈیو برداری ان کی دیکھ بھال کریگی ۔ اس برادری نے مستحق پناہ گزینوں کو انسانی بنیادوں پر ویزا کی فراہمی کے لئے اطالوی حکومت کے ساتھ ایک پراجکٹ شروع کی ہے ۔ ویٹکن نے کہا کہ مصیبت زدہ پناہ گزینوں کی مدد کیلئے پاپائے روم دنیا کو ایک عملی پیغام دینا چاہتے تھے اس مقصد کے لئے انھوں نے تین مسلم خاندانوں کو اپنا مہمان بنالیا ہے۔

پوپ فرانسس نے پناہ گزینوں کی مدد کیلئے یونان اور اس کے اطراف کے ممالک کی بھرپور ستائش کرتے ہوئے کہا کہ ’’خدا ہی آپ کی فراخدلی و فیاضی کا اجر دیگا ۔ ابتداء سے آپ نے پناہ گزینوں کے استقبال کیلئے اپنا دامن دراز کردیا‘‘۔ قبل ازیں رومن کیتھولک عیسائیوں کے روحانی و مذہبی پیشوا پوپ فرانسیس نے یونان کے جزیرہ لسبوس میں پھنسے ہوئے بے یار و مدگار پناہ گزینوں سے آج کہا کہ اس بحران زدہ حالت میں وہ تنہا نہیں ہیں اور ساری دنیا پر زور دیا کہ پناہ گزینوں کے بحران سے نمٹنے کیلئے ’مشترکہ انسانیت‘ کے جذبہ کے ساتھ جواب دیا جائے ۔ عیسائی پیشواؤں بارتھولومیو اور آرچ بشپ ایرونیمس کے ساتھ پوپ فرانسیس نے آج لسبوس کا معائنہ کیا جہاں ہزاروں پناہ گزیں پھنسے ہوئے ہیں۔ پوپ نے تمام مصیبت زدہ پناہ گزینوں کو دلاسہ دیتے ہوئے کہا کہ ’’آپ ہمت نہ ہاریں، بحران کی اس گھڑی میں آپ تنہا نہیں ہیں ، ساری دنیا کو چاہئے کہ وہ ہماری مشترکہ انسانیت کی بنیاد پر ان کی مدد کرے ‘‘۔

TOPPOPULARRECENT