Monday , August 21 2017
Home / سیاسیات / پٹنہ ایرپورٹ سے مودی اور شاہ کے بیانرس ہٹا دئیے جائیں الیکشن کمیشن سے عظیم اتحاد قائدین کا مطالبہ

پٹنہ ایرپورٹ سے مودی اور شاہ کے بیانرس ہٹا دئیے جائیں الیکشن کمیشن سے عظیم اتحاد قائدین کا مطالبہ

نئی دہلی ۔ 14 ۔ اکٹوبر : ( سیاست ڈاٹ کام ) : بہار میں عظیم اتحاد کے قائدین نے آج الیکشن کمیشن سے یہ نمائندگی کی ہے کہ وزیر اعظم نریندر مودی اور صدر بی جے پی امیت شاہ کے بیانرس اور پوسٹرس طیرانگاہ پٹنہ سے ہٹا دینے کے احکامات جاری کئے جائیں۔ جس سے انتخابی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی ہوتی ہے ۔ کے سی تیاگی ( جنتادل متحدہ ) آر پی این سنگھ ( کانگریس ) منوج جھا ( آر جے ڈی ) اور نامور وکیل کے ٹی ایس تلسی پر مشتمل ایک وفد نے چیف الیکشن کمشنر کو ایک میمورنڈم پیش کیا ۔ اور طیرانگاہ پر نصب کردہ بی جے پی لیڈروں اور انتخابی نشان کے بیانرس اور پوسٹرس کی تفصیلات سے واقف کروایا ۔ انہوں نے یہ شکایت کی کہ ریاست میں طیرانگاہوں اور ریلوے اسٹیشن کو مرکز میں برسر اقتدار جماعت اپنی تشہیر کے لیے استعمال کررہی ہے ۔ جہاں پر مرحلہ وار اسمبلی انتخابات منعقد کئے جارہے ہیں ۔ کانگریس لیڈر مسٹر آر پی این سنگھ نے بتایا کہ سرکاری عمارتوں بشمول ایرپورٹس اور ریلوے اسٹیشن پر ہورڈنگس لگانے کی اجازت نہیں ہے جب کہ الیکشن کمشنر کے حالیہ دورہ پٹنہ کے موقع پر طیرانگاہ کے اندر مودی اور شاہ کی تصاویر اور انتخابی نشان کنول کے بیانرس بھی دیکھے گئے ۔ اس کے باوجود الیکشن کمیشن نے چشم پوشی اختیار کرلی ۔ عظیم اتحاد کے لیڈروں نے سال 2012 میں اترپردیش اسمبلی انتخابات کے موقع پر الیکشن کمیشن کے مجریہ احکامات پر توجہ مبذول کروائی جس میں بہوجن سماج پارٹی کے انتخابی نشان ہاتھی کے مجسموں کو انتخابی ضابطہ اخلاق سختی کے ساتھ نافذ کرتے ہوئے ڈھانک دیا گیا تھا ۔ علاوہ ازیں وفد نے یہ نشاندہی کی کہ الیکشن کمیشن نے سال 2015 میں پالی ٹیکنیکس کے قیام سے متعلق صحافتی اعلامیہ کی اجرائی سے حکومت ہریانہ کو باز رکھا تھا ۔

TOPPOPULARRECENT