Tuesday , July 25 2017
Home / سیاسیات / پٹنہ میں حملے کے خلاف بی جے پی کا احتجاجی مارچ

پٹنہ میں حملے کے خلاف بی جے پی کا احتجاجی مارچ

پٹنہ 18مئی (سیاست ڈاٹ کام ) بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے اپنے ہیڈکوارٹر پر کل راشٹریہ جنتا دل (آر جے ڈی) کے کارکنوں کی جانب سے ہونے والے حملے کے خلاف آج پٹنہ سمیت ریاست بھر میں احتجاجی مارچ نکالا اور حکمراں مہاگٹھ بندھن کے پتلے نذر آتش کئے ۔ بہار اسمبلی میں حزب اختلاف کے لیڈر پریم کمار کی قیادت میں بی جے پی کارکنوں نے ویرچند پٹیل روڈ پر واقع پارٹی کے صدر دفتر سے احتجاجی مارچ نکالا اور ڈاک بنگلہ چوراہے پر چیف منسٹر نتیش کمار، آر جے ڈی کے سربراہ لالو پرساد یادو اور کانگریس کے ریاستی صدر اشوک چودھری کا پتلا جلایا۔ بی جے پی کے کارکن بہار میں جنگل راج نہیں چلے گا اور تیجسوی ، تیج پرتاپ مردہ باد کے نعرے لگا رہے تھے ۔احتجاجی مارچ میں بی جے پی یوا مورچہ کے ریاستی صدر نتن نوین، ممبر اسمبلی ارون کمار اور سنجیو چورسیا کے علاوہ بڑی تعداد میں پارٹی کی خاتون کارکنان بھی شامل ہوئیں۔احتجاج کی وجہ سے ڈاک بنگلہ چوراہے پر جام لگ گیا جہاں سکیورٹی کے پیش نظر پہلے سے ہی بڑی تعداد میں پولس فورس کو تعینات کر دیا گیا تھا۔ اس موقع پر حزب اختلاف کے لیڈر پریم کمار نے کہا کہ بی جے پی کے دفتر پر آر جے ڈی کے کارکنوں نے حملہ لالو پرساد یادو کے اشارے پر کیا ہے ۔ اس سلسلے میں بی جے پی کی جانب سے ایف آئی آر درج ہوئے ایک دن ہو گیا لیکن ابھی تک پولیس نے کسی پر کوئی کارروائی نہیں کی ہے اور نہ کسی کو گرفتار کیا ہے۔ پولیس خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر نتیش کمار نے اپنی کرسی بچانے کے لئے لالو پرساد یادو کے سامنے گھٹنے ٹیک دیئے ہیں۔پریم کمار نے کہا کہ اس معاملے پر پوری ریاست میں بی جے پی کے کارکنوں نے احتجاجی مارچ نکالا ہے ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT