Wednesday , September 27 2017
Home / ہندوستان / پٹھان کوٹ حملہ ‘ این آئی اے پاکستان کو مزید خطوط روانہ کریگی

پٹھان کوٹ حملہ ‘ این آئی اے پاکستان کو مزید خطوط روانہ کریگی

ائر فورس حملہ کے مرتکب چار دہشت گردوں کے پتے روانہ کئے جائیں گے ۔ پاکستان سے مثبت رد عمل ملنے کا امکان کم

نئی دہلی 19 اپریل ( سیاست ڈاٹ کام ) قومی تحقیقاتی ایجنسی ( این آئی اے ) نے پاکستان کو روانہ کرنے کیلئے مزید خطوط تیار کرلئے ہیں جن میں جئیش محمد کے ان چار دہشت گردوں کے پتے شامل ہیں جن پر الزام ہے کہ انہوں نے جنوری میں پٹھان کوٹ ائر فورس ٹھکانہ پر حملہ کیا تھا ۔ این آئی اے نے پاکستان سے ملنے والے ان اشاروں کے باوجود خطوط روانہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے کہ وہ ہندوستان کے تحقیق کاروں کو اپنے ملک آنے کی اجازت دینے تیار نہیں ہے تاکہ اس حملہ کی تحقیقات کو آگے بڑھایا جاسکے ۔ پٹھان کوٹ میں ہوئے حملہ میں سات سکیوریٹی اہلکار ہلاک ہوئے تھے اور 80 گھنٹوں تک چلی لڑائی کے دوران چار دہشت گردوں کو بھی مار گرایا گیا تھا ۔ قومی تحقیقاتی ایجنسی نے چار مہلوک دہشت گردوں کی تصاویر اپنی سرکاری ویب سائیٹ پر پوسٹ کردی ہیں اور عوام سے کہا ہے کہ ان کی شناخت میں مدد کی جائے ۔ سرکاری ذرائع کے بموجب قومی تحقیقاتی ایجنسی کو کئی ای میلس ملنے شروع ہوگئے ہیں جن میں کچھ ای میلس پاکستان سے بھی ہیں ۔ ان میں ان دہشت گردوں کے تعلق سے اطلاعات دی جا رہی ہیں۔

این آئی اے نے پاکستان کی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کے ساتھ اپنے اشتراک میں ان دہشت گردوں کے قیام کے مقامات کے تعلق سے اطلاعات طلب کی تھیں جن کے ناموں کو دورہ کنندہ تحقیقاتی ٹیم کو سونپا گیا تھا ۔ تاہم پاکستان نے ہندوستان کی اس درخواست پر کوئی رد عمل ظاہر نہیں کیا ہے ۔ ایک آئی ایس آئی عہدیدار کے بشمول پانچ رکنی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم نے 27 مارچ سے یکم اپریل تک ہندوستان کا دورہ کیا تھا ۔ اس دوران انہوں نے ائر فورس ٹھکانہ کا دورہ کرنے کے علاوہ 16 گواہوں کے بیانات بھی قلمبند کئے تھے ۔ ای میلس کے ذریعہ ملنے والی اطلاعات کی توثیق کرنے کی کوششوں کے دوران این آئی اے نے جئیش محمد دہشت گرد گروپس کے کچھ دہشت گردوں کی تصاویر اور ان کے پتے بھی دکھائے تھے جو یہاں مختلف جیلوں میں قید ہیں۔ ان کے تعلق سے این آئی اے کو کار آمد اطلاعات ملی ہیں۔ کہا گیا ہے کہ ایک دہشت گرد ناصر حسین کے گھر کا پتہ ہے ۔ وہ پنجاب صوبہ میں ملتان شہر سے 100 کیلومیٹر دور ایک ٹاؤن کا ساکن بتایا گیا ہے ۔ وہ محمد مانسا نامی شخص کا فرزند ہے ۔ کہا گیا ہے کہ ناصر حسین نے پٹھان کوٹ ائر فورس حملہ پر حملہ سے کچھ ہی دیر قبل اپنی والدہ قیام ببر کو فون کیا تھا ۔ دوسرے دہشت گرد کی حافظ ابوبکر فرز۔د محمد فاضل ساکن گجرانوالا پاکستان کی حیثیت سے شناخت ہوئی ہے ۔ تیسرا دہشت گرد عمر فاروق قرار دیا گیا ہے جو عبدالصمد کا فرزند ہے اور صوبہ سندھ کا ساکن بتایا گیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT