Thursday , September 21 2017
Home / Top Stories / پچھلے دوسالوں میں الاقصیٰ میں سوسے زائد نے اسلام میں واپسی کی۔امام

پچھلے دوسالوں میں الاقصیٰ میں سوسے زائد نے اسلام میں واپسی کی۔امام

یروشلم: گذرے دوسالوں میں ایک سوسے زائد لوگ جن کاتعلق مغربی ممالک سے ہے نے مذہب اسلام قبول کرنے کے لئے مسلمانوں کے تیسرے مقد س مقام کا انتخاب کیا۔

جنوری 4چہارشنبہ کے روز ورلڈ بلیٹن میں شائع خبر کے مطابق سابق صدر مفتی یروشلم وامام مسجد اقصیٰ شیخ ایکریم ‘ صابری نے کہاکہ ’’ 97لوگ جو مختلف17مغربی ممالک کے شہری ہیں رضاکارانہ طور پر مذہب اسلام قبول کرنے کے لئے قبلہ اول یعنی مسجد اقصیٰ میں کلام شہادت پڑھاہے‘‘۔

القدس( مقبوضہ یروشلم) کے سابق مفتی کے مطابق مغربی ممالک کے شہری جنھوں نے مذہب اسلام کو قبول کیا ہے ان کا تعلق امریکہ ‘ جرمنی‘ فرانس ‘ فن لینڈ اور برطانیہ سے ہے ۔

شیخ صابری نے اعلان کیا کہ ’’ اسلام انصاف اور روادری کا مذہب ہے‘‘اور یہ ایک جامع مذہب ہے جو سابق کے تمام مذاہب کے الہی پیغامات کا مجموعہ ہے‘‘۔

انہوں نے اپنی بات پر زوردیتے ہولے کہاکہ خیال سختی کے ساتھ رضاکارانہ طور پر ہونا چاہئے‘‘۔ شیخ صابری یروشلم سپریم اسلامک کونسل بھی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT