Sunday , July 23 2017
Home / Top Stories / پیان کیلئے آدھار کے لزوم پر مرکز سے سپریم کورٹ کا سوال

پیان کیلئے آدھار کے لزوم پر مرکز سے سپریم کورٹ کا سوال

نئی دہلی ۔ 21 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) سپریم کورٹ نے مستقل اکاؤنٹ نمبر (پیان) کارڈ کے حصول کیلئے آدھار کارڈ کی پیشکش کو لازمی بنائے جانے پر آج مرکزی حکومت سے سوال اٹھایا، جس پر اٹارنی جنرل مکل روہتگی نے مرکز کی طرف سے رجوع ہوتے ہوئے جسٹس اے کے سکری کی زیرقیادت بنچ نے کہا کہ انہیں اس بات کا پتہ چلا ہیکہ بعض افراد نے جعلی دستاویزات کی بنیاد پر تفصیلات کی پیشکشی کے ذریعہ پیان کارڈس حاصل کیا تھا۔ روہتگی نے کہا کہ ایسی بھی مثالیں ہیں کہ ایک شخص کے پاس متعدد پیان کارڈس ہیں اور یہ فرضی و جعلی پیان کارڈس شل کمپنیوں کو فنڈس کی منتقلی کیلئے استعمال  کئے جارہے ہیں۔ ان کے استدلال پر بنچ نے اٹارنی جنرل سے دریافت کیا کہ ’’آیا یہی اس مسئلہ کا حل ہے کہ پیان کارڈ کیلئے آپ کو آدھار کی ضرورت پڑی ہے؟ اس (آدھار) کو آخر لازمی کیوں قرار دیا گیا ہے‘‘؟ اس سوال پر روہتگی نے جواب دیا کہ پہلے بھی پتہ چلا تھا کہ بعض افراد جعلی و فرضی شناختی کارڈس کی پیشکشی کے ذریعہ اپنے موبائیل فونس کے سم کارڈس بھی حاصل کئے تھے اور عدالت عظمیٰ نے اس قسم کے واقعات کے انسداد کیلئے حکومت کو ہدایت کی تھی۔ بنچ نے کہ پیان کارڈس کیلئے آدھار کو لازمی بنانے حکومت کے اقدام کو چیلنج کرتے ہوئے دائر کردہ درخواست پر 25 اپریل کو سماعت کی جائے گی۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT