Thursday , August 24 2017
Home / کھیل کی خبریں / پیرالمپکس کے اختتام پر ایرانی سائیکلسٹ کو خراج

پیرالمپکس کے اختتام پر ایرانی سائیکلسٹ کو خراج

ریو ڈی جنیرو ، 19 سپٹمبر (سیاست ڈاٹ کام) پیرالمپکس کی اختتامی تقریب میں گزشتہ روز حادثے کے نتیجے میں ہلاک ایرانی پیرا سائکلسٹ کو خراج عقیدت پیش کیا گیا۔ ایرانی پیرا سائیکلسٹ 48 سالہ بہمن گلبارنزاد کو ہفتہ کو مردوں کی سی 5-4 روڈ ریس کے دوران پیش آئے حادثے کے بعد اسپتال لے جایا گیا تھا جہاں وہ جانبر نہ ہو سکے۔ اتوار کی تقریب میں پیرالمپکس انٹرنیشنل کمیٹی کے صدر سر فلپ کریون نے ایرانی سائیکلسٹ کی موت پر ایک منٹ کی خاموشی منانے کیلئے کہا۔ انھوں نے کہا ہے کہ سائیکلسٹ کی موت پیرالمپکس پر حاوی رہی۔ سر فلپ نے ریو گیمز کے انعقاد پر ریو ڈی جنیرو کے شہریوں کا شکریہ ادا کرتے ہوئے اُن کی فراخدلی اور گرمجوشی پر انھیں پیرالمپکس کے اعلیٰ ترین ایوارڈ سے نوازا۔ ایرانی پیرالمپکس کمیٹی کے بیان میں کہا گیا کہ ’’وہ ایک مثالی پیرالمپکس کھلاڑی تھے، جنھوں نے پیار اور توانائی کے ساتھ ایران کا نام پھیلانے کی کوشش کی اور ہم سب کو اُن پر فخر ہے، اور آخر میں انھوں نے اس مقصد کیلئے اپنی جان دے دی‘‘۔ پیرالمپکس کی اختتامی تقریب برطانیہ کے معیاری وقت کے مطابق رات 11:30 بجے منعقد ہوئی اور اس تقریب میں بہمن گلبارنزاد کی یاد میں چند لمحوں کیلئے خاموشی اختیاری کی گئی۔ اختتامی تقریب میں گلبارنزاد کو خراج پیش کرنے کے ساتھ ساتھ اتوار کو ہی والی بال کے اختتامی مقابلوں میں ایران نے طلائی تمغہ جیتا تو پرچموں کو نصف سرنگوں کر دیا گیا تھا۔ انٹرنیشنل پیرالمپکس کمیٹی کا کہنا ہے کہ اس حادثے کی تحقیقات کا آغاز کردیا گیا ہے۔ اس دوران پیرالمپکس مشعل کو بجھا دیا گیا اور 2020ء کے کھیلوں کے میزبان ٹوکیو کو پرچم تھما دیا گیا۔ خیال رہے کہ پیرالمپکس مقابلوں کا آغاز 11 روز قبل رنگا رنگ تقریب کے ساتھ ہوا تھا۔ چین 107 طلائی تمغوں کے ساتھ پہلے، برطانیہ اور شمالی آئرلینڈ 64 طلائی تمغوں کے ساتھ دوسرے جبکہ یوکرین 41 طلائی تمغوں کے ساتھ چوتھے نمبر پر رہا۔

TOPPOPULARRECENT