Monday , September 25 2017
Home / دنیا / پیرس دھماکہ : مجھے فخر ہے کہ میرے بیٹے نے کسی کو ہلاک کرنے کی بجائے خود کو دھماکہ سے اڑالیا

پیرس دھماکہ : مجھے فخر ہے کہ میرے بیٹے نے کسی کو ہلاک کرنے کی بجائے خود کو دھماکہ سے اڑالیا

پیرس ۔ 28 ۔ ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) پیرس حملوں کا سب سے کم عمر حملہ آور جس نے فرانس کے نیشنل اسٹیڈیم میں خود کو دھماکہ سے اڑالیا تھا ، کی ماں نے کہا کہ اسے اپنے بیٹے پر فخر ہے کیونکہ اس نے کسی کو ہلا ک نہ کرتے ہوئے خود کو دھماکہ سے اڑالیا۔ ایک خاتون جس کی فاطمہ حدفی کی حیث یت سے شناخت عمل میں آئی ، کے مغرب ٹی وی کو بتایا کہ اسے یہ پتہ نہیں تھا کہ اس کا بیٹا بلال کا رجحان عسکریت پسندانہ ہوچکا ہے ۔ جب اس نے مراقش کی بجائے مجھے شام سے فون کیا تو میرا ماتھا ٹھنکا کہ بلال نے ضرور کوئی ایسی حرکت کی ہے جو ہمیں مصیبت میں ڈال سکتی ہے ۔ اس نے اپنی ماں کو یہی بتایا تھا کہ وہ  تعطیلات گزارنے مراقش جارہا ہے ۔ دولت اسلامیہ نے اس کے 20 سالہ بیٹے کو اپنے چنگل میں پھنسانے کیلئے ضرور کوئی ایسی چال چلی ہوگی جس سے وہ انکار نہیں کرسکا ہوگا ۔ فاطمہ حدفی نے بتایا کہ 13 نومبر کے حملوں کے بعد اس نے اس اسٹیڈیم کے قریب کا دورہ کیا تھا جہاں اس کے بیٹے بلال نے خود کو دھماکہ سے اڑالیا تھا ۔

TOPPOPULARRECENT