Thursday , September 21 2017
Home / شہر کی خبریں / چارمینار اور قلعہ گولکنڈہ سیاحتی فیس میں آئندہ ماہ اضافہ

چارمینار اور قلعہ گولکنڈہ سیاحتی فیس میں آئندہ ماہ اضافہ

فلموں کی شوٹنگ کیلئے 5 کے بجائے 50 ہزار روپئے یومیہ وصول کئے جائیں گے
حیدرآباد 15 نومبر (سیاست نیوز) تاریخی چارمینار کے علاوہ قلعہ گولکنڈہ کا مشاہدہ کرنے والے سیاحوں کو آئندہ ماہ سے زائد فیس ادا کرنی ہوگی۔ آرکیالوجیکل سروے آف انڈیا نے فیصلہ کیا ہے کہ شہر حیدرآباد میں موجود دونوں تاریخی عمارتوں کے داخلہ کی فیس میں تین گنا اضافہ کیا جائے۔ علاوہ ازیں دونوں مقامات پر کی جانے والی فلموں کی شوٹنگ کی فیس میں بھی زبردست اضافہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ اب تک بھی فلم بنانے والی کمپنیوں کی جانب سے یومیہ 5 ہزار روپئے کرایہ ادا کرتے ہوئے اِن تاریخی مقامات پر فلموں کی شوٹنگ کی جاتی تھی لیکن اب اس میں زبردست اضافہ کرتے ہوئے اسے 50 ہزار روپئے یومیہ کردیا گیا ہے۔ اسی طرح قابل واپسی ڈپازٹ جو 10 ہزار روپئے ہوا کرتا تھا اُس میں بھی زبردست اضافہ کرتے ہوئے اُسے 50 ہزار روپئے کردیا گیا ہے۔ تاریخی چارمینار کو بغیر سیاحت پہونچنے والے ہندوستانی سیاحوں کو اب 15 روپئے ٹکٹ کے لئے ادا کرنے ہوں گے۔ سابق میں سابق میں یہ ٹکٹ 5 روپئے ہوا کرتا تھا۔ اسی طرح بیرونی سیاحوں کے لئے 100 روپئے فی کس ٹکٹ وصول کیا جاتا تھا لیکن اس میں بھی اضافہ کرتے ہوئے 300 روپئے کردیا گیا ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ محکمہ آثار قدیمہ کی جانب سے کیا گیا یہ اقدام محکمہ کو درپیش بجٹ کی قلت کو دور کرنے میں معاون ہوگا۔ یکم ڈسمبر سے ٹکٹ کی نئی شرحوں پر اطلاق ہوگا۔ اس سلسلہ میں متعلقہ عہدیداروں نے بتایا کہ سرکاری طور پر ٹکٹ کی شرحوں میں اضافہ کے اعلامیہ کو منظوری حاصل ہوچکی ہے لیکن یکم ڈسمبر سے یہ اضافہ قابل عمل ہوگا۔

TOPPOPULARRECENT