Monday , August 21 2017
Home / شہر کی خبریں / چارمینار پیدل راہرو پراجکٹ اندرون پانچ ماہ تکمیل کرنے کا تیقن

چارمینار پیدل راہرو پراجکٹ اندرون پانچ ماہ تکمیل کرنے کا تیقن

تاخیر کا اعتراف، چارمینار کے اطراف آوٹر رنگ روڈ کی تجویز، اسمبلی میں کے ٹی آر کا بیان

حیدرآباد۔/17مارچ، ( سیاست نیوز) وزیر پنچایت راج کے ٹی راما راؤ نے تلنگانہ اسمبلی کو تیقن دیا کہ آئندہ چار پانچ ماہ میں چارمینار پیدل راہرو پراجکٹ کو مکمل کرلیا جائے گا۔ انہوں نے پراجکٹ کی جلد تکمیل کیلئے اندرون ایک ہفتہ عوامی نمائندوں کے ساتھ اجلاس منعقد کرنے اور چارمینار کے علاقہ کا دورہ کرنے سے اتفاق کیا ہے۔ وقفہ سوالات کے دوران شہر کے ارکان اسمبلی کے استفسارات کا جواب دیتے ہوئے کے ٹی آر نے پراجکٹ کی تکمیل میں تاخیر کا اعتراف کیا۔ انہوں نے کہا کہ متعلقہ محکمہ جات میں تال میل کی کمی کے باعث یہ صورتحال پیدا ہوئی ہے۔ گلزار حوض کے علاقہ میں 50فیصد کام مکمل ہوچکا ہے جس کے تحت فرش بچھانے کا کام انجام دیا گیا، باقی 50فیصد کام عدالت کے فیصلہ کے باعث روکا گیا تھا جسے جلد شروع کیا جائے گا۔ تاریخی چارمینار کے تحفظ کے بارے میں کے ٹی آر نے کہا کہ چارمینار حیدرآباد کی شان ہے اور اسے کسی بھی نقصان سے بچانا ہم تمام کی ذمہ داری ہے۔ انہوں نے کہا کہ چارمینار کو آلودگی کے خطرہ سے بچانے کیلئے اقدامات کئے جائیں گے اور چارمینار کے اطراف بیاٹری سے چلنے والی چھوٹی گاڑیوں اور چھوٹی بسوں کو چلانے کی تجویز ہے۔

انہوں نے کہا کہ اگر تمام افراد کا تعاون شامل حال رہا تو پیدل راہرو پراجکٹ کو آئندہ چار پانچ ماہ میں مکمل کیا جاسکتا ہے۔ اس سلسلہ میں حکومت سنجیدہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ پراجکٹ کی موجودہ صورتحال اور تاجروں اور ہاکرس کے مسائل جاننے کیلئے بہت جلد چارمینار کا دورہ کریں گے اور تمام سے بات چیت کی جائے گی۔ کے ٹی آر نے بتایا کہ 1993 میں اس پراجکٹ کا منصوبہ تیار کیا گیا تھا تاہم اس پر عمل آوری 2007سے شروع کی گئی۔ انہوں نے تاریخی چارمینار کو آنے والے ہزاروں سیاحوں کیلئے بیت الخلاء کی سہولت نہ ہونے پر افسوس کا اظہار کیا اور کہا کہ وہاں نئے بیت الخلاء کی تعمیر یا پھر عارضی بیت الخلاء کا انتظام کیا جائے گا۔ انہوں نے چارمینار کے اطراف واقع چار تاریخی کمانوں کے تحفظ کا بھی تیقن دیا۔ حکومت چارمینار کے اطراف پارکنگ لاٹ کی تعمیر کیلئے جگہ تلاش کررہی ہے۔ اگر کوئی خانگی فرد اپنے کامپلکس میں پارکنگ لاٹ کیلئے جگہ فراہم کرتا ہے تو اسے بلدیہ کی جانب سے سہولت فراہم کی جائے گی۔ کے ٹی آر نے کہا کہ چارمینار کا علاقہ دراصل معاشی زون کی طرح ہے لہذا اطراف واکناف کے دکانداروں اور چھوٹے کاروبار کرنے والوں کا تحفظ کیا جائے گا۔ اصل سوال کے جواب میں کے ٹی راما راؤ نے کہا کہ اس پراجکٹ کے تحت چارمینار کے اطراف 60فیٹ کی آؤٹر رنگ روڈ اور 40فیٹ کی اِنر رنگ روڈ شامل ہیں۔ لاڈ بازار کے علاقہ میں فرش بچھانے کا کام زیر التواء ہے کیونکہ دکان مالکین اجازت نہیں دے رہے ہیں۔ گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن دکان مالکین سے بات چیت کرتے ہوئے کام کی جلد تکمیل کی مساعی کررہا ہے۔ اس پراجکٹ میں ریاستی حکومت کے بجٹ کے علاوہ  مرکزی حکومت کی بھی حصہ داری ہے۔ ارکان اسمبلی نے پراجکٹ میں تاخیر کا مسئلہ اٹھایا اور کہا کہ گزشتہ 8 برسوں سے پراجکٹ مکمل نہیں کیا گیا۔ ارکان نے کہا کہ بڑھتی آلودگی کے سبب تاریخی چارمینار کو خطرہ لاحق ہورہا ہے اور عمارت کمزور ہورہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT