Sunday , April 30 2017
Home / شہر کی خبریں / چارمینار پیدل راہرو پراجکٹ کے ضمن حصول جائیداد کا عنقریب آغاز

چارمینار پیدل راہرو پراجکٹ کے ضمن حصول جائیداد کا عنقریب آغاز

نئی سڑک نکالنے کی تجویز ، اندرون پندرہ یوم مالکین کے ساتھ بات چیت
حیدرآباد۔ 8 مارچ (سیاست نیوز) چارمینارپیدل راہرو پراجکٹ کے سلسلہ میں جائیدادوں کے حصول کے عمل کا بہت جلد آغاز کیا جائے گا اور نئی منصوبہ بندی کے مطابق حکومت کی جانب سے جائیدادیں حاصل کرتے ہوئے گاڑیوں کے لئے نئی سڑک نکالنے کے علاوہ چارمینار کے اطراف جائیدادوں کے حصول کو ممکن بنایا جائے گا۔ چارمینار پیدل راہرو پراجکٹ پر خدمات انجام دینے والے عہدیداروں نے گذشتہ دنوں پراجکٹ کے جاریہ کا موں کا جائزہ لیتے ہوئے پراجکٹ کی زد میں آنے والی جائیدادوں کے متعلق آگہی حاصل کی اور بتایا جاتا ہے کہ آئندہ 15یوم کے دوران جائیداد مالکین سے بات چیت کرتے ہوئے ان کی جائیدادوں کے حصول کے سلسلہ میں کاروائی کا آغاز کیا جائے گا۔ حکومت نے اندرون 6ماہ چارمینار پیدل راہرو پراجکٹ کی تکمیل کا اعلان کیا تھا لیکن زائد از 18ماہ گذر جانے کے باوجود بھی تعمیراتی و ترقیاتی کا موں کا سلسلہ جاری ہے اورانتہائی سست رفتاری کے ساتھ جاری کاموںکے سبب محکمہ پولیس کو بھی دشواریوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ چارمینار پیدل راہرو پراجکٹ کے تحت جائیدادوں کے حصول کے علاوہ اطراف موجود ٹھیلہ بنڈی رانوں کو مناسب جگہ کی فراہمی پر بھی غور کیا جانے لگا ہے بتایا جاتا ہے کہ تاریخی چارمینار کے اطراف و اکناف موجود ٹھیلہ بنڈی رانوں کو قریب میں جگہ کی فراہم کرنے کے متعلق جائزہ لینے کی ہدایت جاری کی گئی ہے ۔ بتایا جاتا ہے کہ وزارت بلدی نظم و نسق کے عہدیداروں اور محکمہ مال کے علاوہ دیگر محکمہ جات کے عہدیداروں کا مشترکہ اجلاس اس سلسلہ میں بہت جلد منعقد کئے جانے کا امکان ہے اور اس اجلاس کے دوران جائیدادوں کے حصول کے علاوہ ٹھیلہ بنڈی رانوں کی منتقلی اور انہیں چارمینار کے قریب میں ہی جگہ کی فراہمی کے متعلق جائزہ لیا جائے گا۔ذرائع کے بموجب ٹھیلہ بنڈی رانوں کے لئے جگہ کی نشاندہی کرلی گئی ہے اور بہت جلد حکومت کو اس سلسلہ میں رپورٹ پیش کردی جائے گی لیکن جگہ کی حوالگی اور ٹھیلہ بنڈی رانوں کی منتقلی کا عمل حکومت کی مرضی پر منحصر ہوگا۔ جی ایچ ایم سی کی جانب سے اضافی ٹھیلہ بنڈیوں کو منتقل کرنیکی سفارش کی جا رہی ہے اور ساتھ ہی حکومت کو متبادل جگہ کے متعلق بھی واقف کروایا جا رہا ہے تاکہ اس سلسلہ میں جلد قطعی فیصلہ لیا جائے اور جائیدادوں کے حصول کے سلسلہ میں ماہرین کی کمیٹی کی تشکیل عمل میں لائی جائے تاکہ مالکین جائیداد سے مذاکرات کا عمل شروع ہو سکے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT