Friday , April 28 2017
Home / Hadis Shareef / چاند کا دو ٹکڑے ہونا

چاند کا دو ٹکڑے ہونا

عَنْ عَبْدِ ﷲِ بْنِ مَسْعُودٍ رضي اللہ عنه قَالَ : اِنْشَقَّ الْقَمَرُ عَليٰ عَهْدِ رَسُوْلِ ﷲِ صلي اللہ عليه وآله وسلم فِلْقَتَيْنِ. فَسَتَرَ الْجَبَلُ فِلْقَةً وَکَانَتْ فِلْقَةٌ فَوْقَ الْجَبَلِ. فَقَالَ رَسُوْلُ ﷲِ صلي اللہ عليه وآله وسلم : اللَّهُمَّ اشْهَدْ. مُتَّفَقٌ عَلَيْهِ وَ هَذَا لَفْظُ مُسْلِمٍ.
وفي رواية : عَنْ أَنَسِ بْنِ مَالِکٍ رضي اللہ عنه أَنَّ أَهْلَ مَکَّةَ سَأَلُوْا رَسُوْلَ ﷲِ صلي اللہ عليه وآله وسلم أَنْ يُرِيَهُمْ آيَةً، فَأَرَاهُمُ انْشِقَاقَ الْقَمَرِ مَرَّتَيْنِ.
مُتَّفَقٌ عَلَيْهِ وَهَذَا لَفْظُ مُسْلِمٍ.
’’حضرت عبداﷲ بن مسعود رضی اللہ عنہ روایت کرتے ہیں کہ چاند کے دو ٹکڑے ہونے کا واقعہ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے عہد مبارک میں پیش آیا، ایک ٹکڑا پہاڑ میں چھپ گیا اور ایک ٹکڑا پہاڑ کے اوپر تھا تو رسول اﷲ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا : اے اﷲ تعالیٰ توگواہ رہنا۔‘‘
’’اور حضرت انس بن مالک رضی اللہ عنہ سے مروی ایک روایت میں ہے کہ اہل مکہ نے حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم سے معجزہ دکھانے کا مطالبہ کیا تو آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے انہیں دو مرتبہ چاند کے دو ٹکڑے کر کے دکھائے۔‘‘

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT