Thursday , September 21 2017
Home / ہندوستان / چاول کی قیمت میں زبردست اضافہ کا امکان

چاول کی قیمت میں زبردست اضافہ کا امکان

خریف کی فصل میں کمی کے باعث آنے والے دنوں میں قلت ہوگی
نئی دہلی۔15 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) دالوں کے بعد چاول کی قیمت میں زبردست اضافہ کا امکان ظاہر کیا جارہا ہے۔ آنے والے مہینوں میں چاول کی قیمتیں بھی آسمان کو پہنچیں گیں۔ صنعتی ادارہ اشوشم کے مطابق خریف کی فصل میں کمی کے باعث چاول کا ذخیرہ گھٹ جائے گا اور اس کی قلت پیدا ہوگی۔ تاہم مارکٹ کے موجودہ قیمت کے رجحان سے پتہ چلتا ہے کہ غیر باسمتی چاولوں کی قیمت گزشتہ سال 30 روپئے کیلو کے مقابل اس سال 25 روپئے فی کیلو ہوئی ہے۔ ہول سیل مارکٹ میں یہ قیمت اب بھی 25 روپئے فی کیلو چاول دستیاب ہے۔ اسی طرح باسمتی چاول کی ہول سیل مارکٹ قیمت میں 30 فیصد کمی آئی ہے۔ جو چاول گزشتہ سال 62 تا 65 روپئے فی کیلو گرام دستیاب تھا اب یہ چاول مارکٹ میں 44 تا 45 روپئے فی کیلو گرام دستیاب ہے جبکہ صنعتی ادارہ اشوشم نے اپنے سروے میں بتایا ہے کہ دالوں، پیاز اور تیل کی قیمتوں میں اضافے کے بعد چاولوں کی قیمتیں بھی عوام الناس کے لئے مشکلات پیدا کردیں گی۔ اگر وقت پر احتیاطی اقدامات نہیں کئے گئے تو مارکٹ سے چاول بھی غائب ہوجائے گا۔ چاول کی قیمتیں آسمان کو چھونے لگیں گیں اور آنے والے مہینوں میں اس کا ذخیرہ ختم ہوجائے گا تو نئی فصل آنے کا انتظار رہے گا۔ حکومت کے تخمینہ کے مطابق خریف کی فصل سے 2015-16ء میں 90.61 ملین ٹن چاول کی پیداوار ہوگی۔ پنجاب، ہریانہ، اترپردیش، بہار، مہاراشٹرا اور کرناٹک میں پانی کی کمی کے باعث خشک سالی پیدا ہوئی ہے۔ ان ریاستوں میں چاول کی پیداوار بھی گھٹ رہی ہے۔ بارش نہ ہونے سے چاول کی پیداوار 89 ملین ٹن ہوسکتی ہے۔ جبکہ 2015-16ء کے دوران 103 ملین ٹن کا تخمینہ لگایا گیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT