Tuesday , October 17 2017
Home / شہر کی خبریں / چلو اسمبلی پروگرام کو سبوتاج کرنے کا حکومت تلنگانہ پر الزام

چلو اسمبلی پروگرام کو سبوتاج کرنے کا حکومت تلنگانہ پر الزام

ریاست تلنگانہ پولیس اسٹیٹ میں تبدیل ، سکریٹری سی ایل سی رگھوناتھ کا بیان
حیدرآباد۔30ستمبر (سیاست نیوز) سیول لبرٹیز کمیٹی کے قائدین نے چلو اسمبلی پروگرام کو سبوتاج کرنے اور چار سوسے زائد سیول سائٹی قائدین کی گرفتاری عمل میں لاتے ہوئے ریاست تلنگانہ کو پولیس اسٹیٹ میںتبدیل کرنے کا حکومت تلنگانہ پر الزام عائد کیا۔ آج یہاں قدیم پریس کلب بشیرباغ کے روبرو میڈیا کے نمائندو ں سے بات کرتے ہوئے جنرل سکریٹری سی ایل سی مسٹر راگھو ناتھ نے آلیر فرضی انکاونٹر کے بعد ورنگل میں ایک او ربے رحمانہ انکاونٹر کے ذریعہ حکومت تلنگانہ کو دلت اور مسلم دشمنی کا ثبوت دینے کا بھی الزام عائد کیا۔ مسٹر راگھو ناتھ نے وقار الدین او رساتھیو ں کے بعد شروتی اور ودیا ساگر ریڈی کے فرضی انکاونٹر کے خلاف سیول سوسائٹی کی آواز کو دبانے والی حکومت تلنگانہ پر جمہوری انداز میںاحتجاج منعقد کرنے والوں پر مظالم ڈھانے والی حکومت قراردیا۔انہوں نے کہاکہ جمہوری انداز میںاحتجاج کرنے والوں کے ساتھ پولیس نے مجرموں جیسا سلوک کیا ہے۔ انہوں نے طلبہ او رسیول سوسائٹی کے سینئر قائدین کی گرفتاری پر شدید اعتراض کرتے ہوئے کہاکہ تمام محروسین کی غیر مشروط رہائی عمل میں لائی جائے۔انہوں نے ورنگل فرضی انکاونٹر میںہلاک ہونے والی بی ٹیک طلبہ شروتی اور ودیاساگر ریڈی کے والدین کو بھی پولیس کی جانب سے گرفتار کئے جانے پر حیرت ظاہر کی۔

TOPPOPULARRECENT