Thursday , August 24 2017
Home / کھیل کی خبریں / چلی کو کی شکست ‘ جرمنی پہلی مرتبہ کنفیڈریشن کپ چیمپئن

چلی کو کی شکست ‘ جرمنی پہلی مرتبہ کنفیڈریشن کپ چیمپئن

سینٹ پیٹرز برگ ۔3جولائی (سیاست ڈاٹ کام ) عالمی چیمپیئن جرمن فٹ بال ٹیم نے کوپا امریکہ کی فاتح چلی کی ٹیم کو 1-0 گول سے شکست دے کر کنفیڈریشن کپ اپنے نام کر لیا ہے۔ جرمنی نے پہلی مرتبہ اس ٹورنمنٹ میں کامیابی حاصل کی ہے۔ اتوار کی رات روسی شہر سینٹ پیٹرز برگ میں کھیلے گئے اس فائنل میچ میں جرمنی اور چلی کی ٹیموں کے مابین شاندار مقابلہ ہوا اور دونوں ٹیموں نے ایک دوسرے پر تابڑ توڑ حملے کیے۔ تاہم میچ کا واحد گول پہلے ہاف میں جرمن کھلاڑی لارس شٹینڈل نے کیا، جو فیصلہ کن ثابت ہوا۔کفیڈریشن کپ کے فائنل سے قبل ہی جرمن ٹیم کے کوچ یوآخم لوو نے کہہ دیا تھا کہ جس مقصد کے ساتھ وہ اپنی ٹیم کو لے کر روس پہنچے تھے، وہ حاصل کر لیا گیا ہے۔ یہ امر اہم ہے کہ کفیڈریشن کپ میں شرکت کرنے والی جرمن ٹیم میں متعدد اسٹار کھلاڑی شامل نہیں کئے گئے تھے۔ تاہم جن نوجوان کھلاڑیوں کو موقع دیا گیا، انہوں نے خود کو بہترین طریقے سے منوانے کی کوشش کی۔جرمن کوچ لووو کے مطابق آئندہ ورلڈ کپ سے قبل سینیئر کھلاڑیوں کو آرام دیا گیا ہے جبکہ اس دوران نوجوان ابھرتے ہوئے جرمن کھلاڑٰیوں کو عالمی سطح پر خود کو منوانے کا موقع فراہم کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کوشش ہے کہ جرمن ٹیم میں زیادہ سے زیادہ نوجوان کھلاڑیوں کو کھیلنے کا موقع دستیاب ہو سکے تاکہ مستقبل میں نوجوان کھلاڑیوں کی کمی محسوس نہ ہو۔جرمنی کے کپتان اور اسٹار گول کیپر مانوئل نوئر، اسٹرائیکر تھوماس ملر، سامی خدیرا، جیروم بوؤٹنگ، مڈ فیلڈر محسوت اوزل اور ٹونی کروس کوئی بھی اس ٹیم میں شامل نہیں تھے، جس نے کنفیڈریشن کپ کے فائنل میں چلی کو شکست دی ہے۔ ان سینیئر کھلاڑیوں کی عدم موجودگی میں جرمن ٹیم کی انتہائی عمدہ کامیابی کو دیکھتے ہوئے ناقدین نے کہا ہے کہ جرمن فٹ بال کا مستقبل انتہائی تابناک ہے۔اس سے قبل گزشتہ ہفتے ہی جرمنی کے نوجوان کھلاڑیوں پر مشتمل انڈر 21 ٹیم نے بھی یورپی چیمپیئن شپ کا خطاب اپنے نام کیا ہے۔ پولینڈ کے شہر کاراکاؤ میں کھیلے گئے اس ٹورنمنٹ کے فائنل میں واحد گول نوجوان جرمن کھلاڑی مچل وائزر نے کیا تھا۔جرمنی کی انڈر 21 فٹ بال ٹیم نے 2009 میں بھی اس ٹورنمنٹ میں کامیابی حاصل کی تھی۔ اس میچ میں شکست سے دوچار ہونے والی اسپین کے نوجوان کھلاڑیوں کی ٹیم تین مرتبہ یورپی چیمپیئن شپ خطاب اپنے نام کرنے کا اعزاز رکھتی ہے۔

 

TOPPOPULARRECENT