Friday , September 22 2017
Home / جرائم و حادثات / چندرائن گٹہ حملہ مقدمہ پنچ گواہ نے ہتھیار اور بعض ملزمین کی شناخت کی

چندرائن گٹہ حملہ مقدمہ پنچ گواہ نے ہتھیار اور بعض ملزمین کی شناخت کی

حیدرآباد /23نومبر ( سیاست نیوز ) چندرائن گٹہ حملہ کیس کی سماعت جو روزانہ کی اساس جاری ہے ،آج ایک پنچ گواہ نے عدالت میں بیان قلمبند کرواتے ہوئے حملے میں استعمال کئے گئے ہتھیار اور بعض ملزمین کی شناخت کی ۔ 38 سالہ فہد بن محمد ساکن موسی رام باغ نے بتایا کہ 12 مئی سال 2011 کو اسے سنٹرل کرائم اسٹیشن کے ایک اے سی پی نے طلب کیا اور ریاست میں موجود 3 افراد کی موجودگی کی اطلاع دی اور اس کی موجودگی میں مبینہ اقبالیہ بیان قلمبند کیا گیا ۔ گواہ نے عدالت میں موجود ملزم محمد بن صالح وہلان کی شناخت کی اور حملہ میں استعمال کئے گئے ایک خنجر کی بھی شناخت کی ۔ اس نے بتایا کہ اقبالیہ بیان قلمبند کرنے کے بعد پولیس نے اس سے بیان کی کاپی پر دستخط لی ۔ پولیس نے ایک سیاہ رنگ کا موبائل فون بھی ضبط کیا اور اس موبائل فون کی شناخت کی گئی ۔ گواہ نے ایک اور ملزم عفیف بن یونس یافعی کی بھی شناخت کی۔ فہد بن محمد نے استغاثہ کی جانب سے احاطہ عدالت میں پیش کئے گئے چار موبائل فونس میں اس فون کی شناخت کی جسے پولیس نے ضبط کیا تھا ۔ عدالت میں دئے گئے اپنے بیان میں پنچ گواہ نے سیف بن حسین یافعی کی بھی شناخت کی اور عمر فنکشن ہال چندرائن گٹہ سے ملزم کے قبضہ سے  ریوالور کو ضبط کرنے کی گواہی دی ۔ عمر ڈیری فارم سے بھی ہتھیار ضبط کرنے کی تصدیق کی ۔ اس گواہ کا بیان قلمبند کئے جانے پر کل وکلاء دفاع اس پر جرح کریں گے ۔

TOPPOPULARRECENT