Thursday , August 17 2017
Home / شہر کی خبریں / چندرا بابو نائیڈو کو تلنگانہ عوام کے خلاف بیان بازی پر انتباہ

چندرا بابو نائیڈو کو تلنگانہ عوام کے خلاف بیان بازی پر انتباہ

حیدرآباد کی منفرد تہذیب ، این ٹی آر سے منسوب ریمارکس نامناسب ، ٹی آر ایس قائدین کا ردعمل
حیدرآباد ۔ 23 ۔ جولائی(سیاست  نیوز) تلنگانہ راشٹرا سمیتی نے چیف منسٹر آندھراپردیش چندرا بابو نائیڈو کو انتباہ دیا کہ وہ تلنگانہ عوام کے خلاف بیان بازی سے گریز کریں۔ پارٹی کے ارکان اسمبلی سرینواس گوڑ اور جی بالراجو نے اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے چندرا بابو نائیڈو کے حالیہ بیان پر شدید برہمی ظاہر کی جس میں انہوں نے حیدرآبادیوں کے بارے میں ریمارک کیا تھا۔ ارکان اسمبلی نے کہا کہ چندرا بابو نائیڈو کو چاہئے کہ وہ تلنگانہ عوام کے بارے میں اظہار خیال کے وقت اپنی زبان قابو میں رکھیں۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ سماج اور عوام کے خلاف کسی بھی توہین کو ہرگز برداشت نہیں کیا جائے گا ۔ ارکان اسمبلی نے کہا کہ تلنگانہ اور حیدرآباد کی منفرد تہذیب ہے، اس پر تنقید کسی کو کوئی حق نہیں۔ چندرا بابو نائیڈو نے یہ تاثر دینے کی کوشش کی کہ حیدرآبادی عوام کو صبح جلد جاگنا این ٹی راما راؤ نے سکھایا ہے۔ اس طرح کے ریمارکس سے چندرابابو نائیڈو نے تلنگانہ اور بالخصوص حیدرآبادی عوام کی توہین کی ہے۔ ارکان اسمبلی نے کہا کہ تلنگانہ ریاست اپنے قیام سے ہی ترقی یافتہ ریاست رہی ہے اور جس وقت آندھراپردیش میں برقی سربراہی کا کوئی تصور نہیں تھا ، اس وقت تلنگانہ میں برقی سربراہ کی جاتی تھی۔ ارکان اسمبلی نے کہا کہ چندرا بابو نائیڈو کو اسمبلی کی عمارت کے بارے میں کہنے کا کوئی حق نہیں

اور اسمبلی کی عمارت ان کے آباء و اجداد کی تعمیر کردہ نہیں ہے۔ حیدرآباد کی تاریخی عمارتیں نظام دور حکومت کی تعمیر کردہ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ کی آندھراپردیش میں شمولیت کے بعد سے تلنگانہ علاقہ پسماندگی کا شکار ہے۔ انہوں نے کہا کہ آندھرائی حکمرانوں نے ہمیشہ ہی تلنگانہ کی ترقی کو نظر انداز کیا۔ سرینواس گوڑ نے الزام عائد کیا کہ چندرا بابو نائیڈو ریاست کی تقسیم کے باوجود تلنگانہ کی ترقی میں رکاوٹ پیدا کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ انہوںنے کہا کہ مختلف پراجکٹس کی تعمیر میں رکاوٹ پیدا کرنے کیلئے مرکزی حکومت سے نمائندگی کی جارہی ہے۔ پالمور لفٹ اریگیشن پراجکٹ کے خلاف مرکزی حکومت کو چندرا بابو نائیڈو کی نمائندگی کا حوالہ دیتے ہوئے ٹی آر ایس ارکان اسمبلی نے کہا کہ کوئی بھی طاقت اس پراجکٹ کی تعمیر کو روک نہیں پائے گی۔ انہوںنے کہا کہ تلگو دیشم دور حکومت میں محبوب نگر ضلع کی ترقی کو فراموش کردیا گیا جس کے نتیجہ میں لاکھوں افراد نقل مقام کرنے پر مجبور ہوچکے ہیں۔ انہوں نے تلنگانہ تلگو دیشم قائدین کو مشورہ دیا کہ وہ چندرا بابو نائیڈو کی تائید کے بجائے تلنگانہ کے پراجکٹ پر اپنے موقف کی وضاحت کریں۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ عوام چندرا بابو نائیڈو اور انکے حامیوں کو مناسب سبق سکھائیں گے۔

TOPPOPULARRECENT