Wednesday , September 20 2017
Home / شہر کی خبریں / چندرا بابو پر سماج کے تمام طبقات کے ساتھ دھوکہ دہی کا الزام

چندرا بابو پر سماج کے تمام طبقات کے ساتھ دھوکہ دہی کا الزام

پرکشش وعدے فریبی ثابت ، وائی ایس جگن موہن ریڈی
حیدرآباد ۔ 14 ۔ اگست : ( سیاست نیوز ) : قائد اپوزیشن آندھرا پردیش قانون ساز اسمبلی و صدر وائی ایس آر کانگریس پارٹی مسٹر وائی ایس جگن موہن ریڈی نے چیف منسٹر آندھرا پردیش مسٹر این چندرا بابو نائیڈو پر سماج کے تمام طبقات کے ساتھ دھوکہ دہی پر مبنی وعدے کرنے کا الزام عائد کیا اور کہا کہ کسانوں کو 87,612 کروڑ روپئے کے قرضہ جات معاف کرنے ، بہنوں کو 14 ہزار کروڑ روپئے کے قرضہ جات معاف کرنے اور نوجوانوں کو روزگار کے مواقع فراہم کرنے کا وعدہ کر کے سماج کے تمام طبقات کو چیف منسٹر دھوکہ دیا ۔ جگن نے پارٹی امیدوار مسٹر شلپا موہن ریڈی کے ساتھ نندیال ٹاون میں منظم کردہ روڈ شو میں حصہ لے رہے تھے ۔ پارٹی اور پارٹی امیدوار کے تعلق سے عوام کو واقف کروانے سے کہیں زیادہ حکومت آندھرا پردیش بالخصوص چندرا بابو پر سخت تنقید کرنے پر اولین ترجیح دی اور کہا کہ گذشتہ ساڑھے تین سال کے دوران چیف منسٹر اور ان کے کابینی وزراء نے حلقہ اسمبلی نندیال کی کسی شاہراہ پر دکھائی نہیں دئیے اور کہا کہ اگر ضمنی انتخاب نہیں ہوتا تو حلقہ اسمبلی نندیال کا رخ بھی نہیں کیے ۔ جگن موہن ریڈی نے کہاکہ تین سال قبل یوم آزادی تقریب کے موقع پر چیف منسٹر نے کرنول کو مرکز توجہ بنانے کے لیے خصوصی ترقیاتی اقدامات کرنے ، ایرپورٹ ، ٹریپل آئی ٹی ، مائیننگ یونیورسٹی ، فوڈ پارک ، انڈسٹریز وغیرہ کا قیام عمل میں لانے کے وعدے کیا تھا ۔ لیکن آج تک ان وعدوں پر کوئی توجہ ہی نہیں دی گئی ۔ قائد اپوزیشن نے چیف منسٹر سے دریافت کیا کہ آیا سڑکوں کے دونوں جانب دوکانوں کو منہدم کرنا یہی ریاستی ترقی ہے ؟ اور الزام عائد کیا کہ کوئی معاوضہ ادا کئے بغیر چندرا بابو نے کی انہدامی کارروائی کروائی اور کہا کہ آج تک کسی ایک نوجوان کو روزگار کا موقعہ فراہم نہیں کیا گیا ۔ جگن نے حکومت کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ وہ اگر آندھرا پردیش میں برسر اقتدار آئیں گے تو فی الفور پولی ویندلہ کے خطوط پر حلقہ اسمبلی نندیال کو ترقی دیں گے ۔ لہذا انہوں نے عوام سے مسٹر شلپا موہن ریڈی وائی ایس آر کانگریس پارٹی امیدوار کو بھاری اکثریت سے کامیاب بنانے کی اپیل کی ۔۔

 

TOPPOPULARRECENT