Tuesday , May 23 2017
Home / ہندوستان / چوہوں نے شراب پی لی، آبکاری عہدیدار کا عذر

چوہوں نے شراب پی لی، آبکاری عہدیدار کا عذر

جئے پور۔ 9 مئی (سیاست ڈاٹ کام) بہار کے چوہوں کی طرح راجستھان کے چوہے بھی ایسا لگتا ہیکہ معاملہ کو بند رکھنے پر یقین نہیں رکھتے۔ ادئے پور میں محکمہ آبکاری کے ایک عہدیدار سے جب ایک مقامی عدالت نے 8 سال قبل ضبط کی گئی شراب کو پیش کرنے کیلئے کہا گیا تو انہوں نے خالی بوتلوں کا انبار سامنے رکھ دیا۔ ایک وکیل نے کہا کہ گذشتہ روز سرکاری عہدیدار نے عدالت کو بتایا کہ یہ ممکن ہیکہ شراب چوہوں نے صاف کردی ہے۔ ان کے محکمہ نے 16 جون 2009ء کو ادئے پور کے ایک مکان سے 36 بیر کی بوتلیں اور 83 شراب کی بوتلیں ضبط کئے تھے۔ ملزم کی پیروی کرنے والے گنپت چودھری نے نیوز ایجنسی پی ٹی آئی کو بتایا کہ انہوں نے عدالت سے درخواست کی تھی کہ اکسائز ڈپارٹمنٹ کے عہدیداروں کو ضبط شدہ شراب کے ساتھ طلب کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ عدالت میں ہر کسی کو یہ دیکھ کر حیرانی ہوئی جب اکسائز ڈپارٹمنٹ والوں نے خالی بوتلیں پیش کئے۔ سرکاری ملازم نے ابتداء میں کہا کہ یہ بوتلیں فطری وجوہات کی وجہ سے خالی ہیں۔ اب جب جرح کی گئی تو یہ کہہ دیا کہ ان بوتلوں کی شراب ہوسکتا ہے چوہوں نے پی لی ہے۔ عدالت اب یہ کیس کی سماعت 15 مئی کو کرے گی۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT