Sunday , August 20 2017
Home / شہر کی خبریں / چھوٹے بھائی نے گردہ دے کر بڑے بھائی کی جان بچالی

چھوٹے بھائی نے گردہ دے کر بڑے بھائی کی جان بچالی

جناب زاہد علی خاں کی جانب سے محمد ماجد کی ستائش ، محمد واجد کی والدہ کو فیض عام ٹرسٹ کی طرف سے 50 ہزار روپئے کی امداد
حیدرآباد ۔ 17 ۔ نومبر : ( نمائندہ خصوصی) : ایک ایسے وقت جب کہ نفسا نفسی کا عالم ہے ہر کوئی اپنی فکر میں لگا ہوا ہے ۔ ایک چھوٹے بھائی نے بڑے بھائی کو گردہ کا عطیہ دے کر اس کی جان بچائی ۔ اخوت و قربانی کے ایسے واقعات صرف ہمارے شہر حیدرآباد فرخندہ بنیاد میں ہی پیش آتے ہیں تب ہی تو اس تاریخی شہر کے شہریوں کی محبت و مروت ایثار و خلوص اور جذبہ ہمدردی و ایثار ساری دنیا میں مشہور ہے ۔ خاص پریشان حال انسانوں کی مدد میں حیدرآبادی سب سے آگے رہتے ہیں ۔ وہ نہیں دیکھتے کہ پریشان حال اور مصیبت زدہ کون ہے ۔ کس مذہب ذات پات یا رنگ و نسل سے تعلق رکھتا ہے ۔ بلکہ وہ تو انسانیت کی بنیاد پر انسانوں کی مدد کرتے ہیں ۔ راقم الحروف کی ملاقات دفتر سیاست میں اس نوجوان محمد ماجد سے ہوئی جس نے اپنے جسم کا ایک اہم عضو یعنی گردہ اپنے بڑے بھائی محمد واجد کو بطور عطیہ پیش کر کے نہ صرف اپنے بھائی کی زندگی بچانے میں اہم رول ادا کیا بلکہ اپنے اس اقدام کے ذریعہ اپنے غریب ماں باپ اور بھائی بہنوں و رشتہ داروں کے چہروں پر مسکراہٹیں بھی واپس لادیں ۔ محمد واجد اور محمد ماجد کے بارے میں جان کر ہمیں احساس ہوا کہ غربت میں اللہ تعالیٰ کسی کو بیمار نہ کرے ۔ اس لیے کہ غریب اپنا علاج بھی کروانے سے قاصر رہتا ہے ۔ محمد ماجد نے دفتر سیاست میں ایڈیٹر سیاست سے ملاقات کی ۔ اس موقع پر جناب زاہد علی خاں صاحب نے یہ کہتے ہوئے محمد ماجد کی ستائش کی کہ تم نے ایسا کام کیا ہے ۔ جس کی مثالیں بہت کم ملتی ہیں ۔ آج کل جائیداد کے لیے بھائیوں کے درمیان آپس میں لڑائی جھگڑے ہورہے ہیں ۔ سگا بھائی اپنے بھائی کو جائیداد دینے سے گریز کررہا ہے اور تم تو اپنے بھائی کو ایک نئی زندگی ملنے کا ذریعہ بن گئے ہو ۔ جس پر 28 سالہ محمد ماجد کی آنکھوں سے آنسو رواں ہوگئے ۔ ادارہ سیاست کے ساتھ مل کر مصیبت زدوں کی مدد کرنے اور تعلیمی و اقتصادی شعبوں میں مسلمانوں کو ترقی دلانے کی کوشش میں مصروف فیض عام ٹرسٹ نے ماجد کی مدد کی ۔ اس موقع پر موجود فیض عام ٹرسٹ کے ٹرسٹی و سکریٹری جناب افتخار حسین نے محمد واجد اور محمد ماجد کی والدہ محمدی بیگم کو 50 ہزار روپئے کی امداد پیش کی ۔ جناب افتخار حسین نے محمد واجد اور محمد ماجد کی والدہ محمدی بیگم کی ہر طرح سے مدد کرنے کا تیقن دیا ۔ سابق ایم پی سید عزیز پاشاہ نے بھی اس نوجوان کی ستائش کی ۔ واضح رہے کہ سیاست میں ان نوجوانوں کے بارے میں اشتہار شائع کئے جانے کے بعد انہیں ایک لاکھ روپئے سے زائد کی رقم بطور عطیات وصول ہوئی ہے ۔ سماجی جہدکار جناب عثمان بن محمد الہاجری کے ساتھ دفتر سیاست پہنچے محمد واجد کے بھائی اور ماں محمدی بیگم نے بڑے دردمندانہ انداز میں بتایا کہ محمد واجد متحدہ عرب امارات میں ٹائیلس کے کام سے وابستہ تھے ۔ اس لڑکے نے اپنی بہنوں کی شادیوں میں بھی اہم رول ادا کیا تھا اور یہ جاننے کے باوجود کہ وہ گردوں کے شدید عارضہ میں مبتلا ہے ۔ اس نے اپنی بیماری کو والدین اور بھائی بہنوں سے چھپائے رکھا تھا اس کا مقصد خاندان والوں کے چہروں پر خوشیاں ہی خوشیاں دیکھنا تھا ۔ محمد ماجد اپنے گھر والوں کے لیے خوشیوں کا باعث تو بنا لیکن اس دوران اس کے دونوں گردے فیل ہوگئے اور مسلسل دو برسوں سے وہ ڈائیلاسیس پر تھا اپنے بھائی کی زندگی بچانے کی خاطر محمد ماجد نے گردہ دینے کا ارادہ کیا اور پھر 4 نومبر کو دکن ہاسپٹل سوماجی گوڑہ میں اس کے گردہ کی تبدیلی عمل میں آئی ۔ اس نازک آپریشن پر جملہ سات لاکھ روپئے کے مصارف آئے ہیں ۔ اس خاندان نے اپنے زیورات و دیگر سامان فروخت کرنے کے ساتھ ساتھ قرض لے کر گردہ کی پیوندکاری کروائی ہے ۔ اس خاندان کی مالی مدد کے خواہاں ہمدردان ملت فون نمبر 9959557211 پر ربط کرسکتے ہیں۔ محمد واجد کا اکاونٹ نمبر اس طرح ہے :
Mohammed Wajeed
A/C. No. 31416336042
IFSC Code No: 0007640
State Bank Of India,
Karwan Branch

TOPPOPULARRECENT