Thursday , August 24 2017
Home / شہر کی خبریں / چیف ایگزیکٹیو آفیسر وقف بورڈ محمد اسد اللہ کی میعاد میں توسیع

چیف ایگزیکٹیو آفیسر وقف بورڈ محمد اسد اللہ کی میعاد میں توسیع

عنقریب احکام ، بورڈ کو بحران سے بچانے حکومت کا فیصلہ
حیدرآباد ۔ 24۔اکتوبر (سیاست نیوز) حکومت نے چیف اگزیکیٹیو آفیسر وقف بورڈ محمد اسد اللہ کی میعاد میں توسیع کا فیصلہ کیا ہے اور اس سلسلہ میں جلد ہی احکامات جاری کئے جائیں گے۔ محمد اسد اللہ کی میعاد آج ختم ہوگئی اور انہوں نے سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمرجلیل سے ملاقات کرتے ہوئے توسیع کے احکامات یا پھر متعلقہ محکمہ سے واپسی کے بارے میں استفسار کیا۔ واضح رہے کہ محمد اسد اللہ نے حکومت سے خواہش کی تھی کہ انہیں وقف بورڈ کی ذمہ داری سے سبکدوش کرتے ہوئے محکمہ مال واپس کردیا جائے ۔ بتایا جاتا ہے کہ سکریٹری اقلیتی بہبود جو بورڈ کے عہدیدار مجاز بھی ہیں ، نے متعلقہ فائل چیف منسٹر کو روانہ کردی۔ چیف منسٹر کے دفتر کے ذرائع کے مطابق محمد اسد اللہ کی میعاد میں توسیع کا فیصلہ کیا گیا ہے تاکہ وقف بورڈ کو کسی بھی بحران سے بچایا جاسکے۔ اس عہدہ کیلئے درکار رینک رکھنے والے عہدیدار وقف بورڈ میں خدمات انجام دینے کیلئے تیار نہیں ہیں۔ حالیہ عرصہ میں محمد اسد اللہ نے وقف بورڈ کی کارکردگی بہتر بنانے کیلئے جو قدم اٹھائے تھے ، اس کے مثبت نتائج کو دیکھتے ہوئے چیف منسٹر نے انہیں برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ بتایا جاتا ہے کہ ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی نے بھی اس سلسلہ میں چیف منسٹر سے سفارش کی ۔ میعاد کی تکمیل کے دن محمد اسد اللہ آج وقف بورڈ پہنچے اور انہوں نے صرف عوامی شکایات کی سماعت کی جبکہ کسی بھی فائل پر دستخط سے گریز کیا۔ مختلف تنظیموں سے وابستہ افراد نے وقف بورڈ پہنچ کر محمد اسد اللہ کی میعاد میں توسیع کا مطالبہ کیا ۔ اس سلسلہ میں چیف منسٹر کو بھی یادداشت روانہ کی گئی ہے۔ محمد اسد اللہ نے ناجائز قبضوں کی برخواستگی کیلئے وقف بورڈ کو زائد اختیارات دیئے جانے کے سلسلہ میں ریاستی سطح کا وقف قانون مدون کیا ہے ۔ اس قانون کے مسودہ کو محکمہ قانون نے منظوری دیدی ہے اور اب حکومت کی منظوری کا انتظار ہے۔ ریاستی سطح کے اس قانون سے کسی بھی ناجائز قبضہ کو بآسانی برخواست کیا جاسکتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT