Tuesday , May 30 2017
Home / Top Stories / چیف منسٹر تلنگانہ کے فرزند وزیر آئی ٹی کے ٹی آر کی کارکردگی میں نمایاں گراوٹ

چیف منسٹر تلنگانہ کے فرزند وزیر آئی ٹی کے ٹی آر کی کارکردگی میں نمایاں گراوٹ

ٹی ہریش راؤ وزیر آبپاشی کی کارکردگی میں ریکارڈ بہتری ، سروے رپورٹ میں حیرت انگیز انکشاف
حیدرآباد۔12مارچ (سیاست نیوز) چیف منسٹر تلنگانہ مسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی جانب سے کروائے گئے سروے میں ریاستی وزیر انفارمیشن ٹکنالوجی و بلدی نظم و نسق مسٹر کے ٹی راما راؤ کی کارکردگی میں نمایاں گراوٹ ریکارڈ کی گئی ہے اور ریاستی وزیر آبپاشی مسٹر ٹی ہریش راؤ کی کارکردگی میں ریکارڈ بہتری پیدا ہوئی ہے۔ بتایاجاتا ہے کہ مسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے 6ماہ قبل اگسٹ میں کروائے گئے سروے سے اس رپورٹ کا موازنہ کرتے ہوئے تلنگانہ راشٹرا سمیتی مقننہ پارٹی میں اس کا انکشاف کیا۔ جاریہ ماہ کے دوران پیش کردہ تمام وزراء اور ارکان اسمبلی کی رپورٹ میں حیرت انگیز بات یہ ہے کہ چیف منسٹر کے فرزند کو 60.40فیصد نشان حاصل ہوئے ہیں جنہیں گذشتہ سروے کے دوران 70.60 فیصد نشانات دیئے گئے تھے۔ اس کے برخلاف چیف منسٹر کی کارکردگی رپورٹ میں کافی بہتری پیدا ہوئی ہے اور جو گذشتہ میں 75.70تھا وہ اب 96.70تک پہنچ چکا ہے۔ باوثوق ذرائع سے موصولہ اطلاعات کے مطابق سروے کی بنیاد عوامی رائے اور متعلقہ حلقہ ووزارت میں جاری کام کاج کے طریقہ کار ہیں۔ چیف منسٹر کے بھانجے ریاستی وزیر آبپاشی کی کارکردگی میں زبردست بہتری ریکارڈ کی گئی ہے اور گذشتہ سروے میں انہیں جو 60.90فیصد نشانات حاصل ہوئے تھے وہ بڑھ کر اب 82.30تک پہنچ چکے ہیں۔مسٹر ہریش راؤ کی کارکردگی میں بہتری کی بنیاد کے متعلق ذرائع کا کہنا ہے کہ گذشتہ تین ماہ کے دوران سدی پیٹ میں نقد سے پاک لین دین اور مشن بھگیریتا و کاکتیہ میں جاری تعمیری کام ہیں جہاں تیز رفتار کام جاری ہونے کا ادعا کیا جا رہا ہے ۔اسپیکر ریاستی اسمبلی مسٹر مدھوسدن چاری کی کارکردگی میں گراوٹ ریکارڈ کی گئی ہے اور انہیں اگسٹ 2016میں 62.80فیصد نشانات دیئے گئے تھے وہ اب گھٹ کر 50.20فیصد رہ گئے ہیں ۔ رکن اسمبلی چندرائن گٹہ جناب اکبر الدین اویسی کی کارکردگی میں چیف منسٹر کی رپورٹ کے مطابق بہتری ریکارڈ کی گئی ہے اور انہیں گذشتہ سروے میں حاصل ہوئے 43.50فیصد نشانات بڑھ کر 57.10تک پہنچ چکے ہیں۔ ریاستی وزیر فینانس مسٹر ای راجندر کی کارکردگی میں بھی بہتری کی رپورٹ موصول ہوئی ہے جس میں انہیں 89.90فیصد نشانات حاصل ہوئے ہیں جبکہ سابق میں انہیں ان کی کارکردگی کیلئے صرف 60.90فیصد نشانات حاصل ہوئے تھے ۔ مسٹر کے چندر شیکھر راؤ کو موصولہ رپورٹ میں سب سے زیادہ خراب کارکردگی تلگو دیشم رکن اسمبلی مسٹر اے ریونت ریڈی کی ہے جنہیں گذشتہ سروے میں 56.80فیصد نشانات حاصل ہوئے تھے جبکہ اس مرتبہ انہیں صرف  49.80نشان حاصل ہوئے ہیں۔ اس سروے کو اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے مسترد کرتے ہوئے یہ کہا جا رہا ہے کہ سروے کے نام پر چیف منسٹر عوام کو گمراہ کر رہے ہیں اور اپنے پسندیدہ یا جن سے کوئی مطلب ہو انہیں بڑھا چڑھا کر پیش کیا جا رہا ہے اور جنہیں خوفزدہ کرنا ہے ان کی عدم کارکردگی کے نام پر انہیں عوامی سطح پر سرکاری رپورٹ کا نام دیتے ہوئے بدنام کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT