Wednesday , May 24 2017
Home / شہر کی خبریں / چیف منسٹر تلنگانہ کے چندر شیکھر راؤ ’ جھوٹوں کا سربراہ ‘ : دامودھر راج نرسمہا

چیف منسٹر تلنگانہ کے چندر شیکھر راؤ ’ جھوٹوں کا سربراہ ‘ : دامودھر راج نرسمہا

تلنگانہ کو مرکز سے 90 ہزار کروڑ کی اجرائی پر وائیٹ پیپر جاری کرنے کا مطالبہ ، سابق ڈپٹی چیف منسٹر کی پریس کانفرنس
حیدرآباد ۔ 16 ۔ فروری : ( سیاست نیوز ) : سابق ڈپٹی چیف منسٹر دامودھر راج نرسمہا نے چیف منسٹر کے سی آر کو جھوٹوں کا سربراہ قرار دیتے ہوئے بی جے پی کے قومی صدر امیت شاہ کی جانب سے تلنگانہ کو مرکز سے 90 ہزار کرور روپئے جاری کرنے کے دعویٰ پر وائیٹ پیپر جاری کرنے کا حکومت تلنگانہ اور بی جے پی سے مطالبہ کیا ۔ آج گاندھی بھون میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے دامودھر راج نرسمہا نے کہا کہ چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر اقتدار حاصل ہونے کے بعد گھمنڈ و تکبر کا شکار ہوگئے ہیں اور ہر چیز کو جھٹلا کر خود کو صحیح ثابت کرنے کے لیے نت نئے طریقے استعمال کررہے ہیں ۔ حکومت کی ان حرکتوں سے ٹی آر ایس عوامی اعتماد سے محروم ہورہی ہے ۔ چیف منسٹر تلنگانہ نے انتخابی منشور میں عوام سے جو بھی وعدے کئے ۔ اس کو پورا کرنے میں ناکام ہوگئے ۔ کے سی آر تلنگانہ کے چیف منسٹر ہے ۔ مگر ایراولی گاؤں کے سرپنچ کی طرح خدمات انجام دے رہے ہیں ۔ حصول اراضیات قانون کے عمل آوری میںحکومت تلنگانہ پوری طری ناکام ہوگئی ہے ۔ اس لیے ماموں ( کے سی آر ) اور ( بھانجہ ) ہریش راؤ کے اسمبلی حلقوں کے درمیانی حصہ سے حکومت اور چیف منسٹر کے خلاف عوامی تحریک کا آغاز ہورہا ہے ۔ جو ٹی آر ایس حکومت کے زوال کی کلید ہوگی ۔ سابق ڈپٹی چیف منسٹر دامودھر راج نرسمہا نے کہا کہ بی جے پی کے قومی صدر امیت شاہ نے تلنگانہ کو مرکز سے 90 ہزار کروڑ روپئے فنڈز جاری کرنے کا اعلان کیا ہے ۔ حکومت تلنگانہ اور بی جے پی اس پر وائیٹ پیپر جاری کریں اور اپنا اپنا موقف پیش کریں ۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی نے حصول اراضیات قانون 2013 کا بل پارلیمنٹ میں منظور کرانے میں اہم رول ادا کیا ہے ۔ وزیراعظم نریندر مودی نے اس قانون میں ترمیم کرنے کے لیے کئی آرڈیننس جاری کئے ہیں جو ناکام ہوگئی ہیں ۔ پارلیمنٹ میں منظور کردہ قانون میں ترمیم کرنے کا ریاستی حکومت کو کوئی حق نہیں ہے ۔ تاہم چیف منسٹر تلنگانہ نے قانون میں ترمیم کرنے کے لیے بل اسمبلی میں منظور کیا ہے اور اس کو قطعی منظوری کے لیے صدر جمہوریہ پرنب مکرجی کے پاس روانہ کیا ہے ۔ کانگریس پارٹی قانونی جدوجہد جاری رکھے گی ۔ ضرورت پڑنے پر سپریم کورٹ سے بھی رجوع ہوگی ۔۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT