Friday , August 18 2017
Home / شہر کی خبریں / چیف منسٹر محکمہ اقلیتی بہبود پر فوری توجہ کریں

چیف منسٹر محکمہ اقلیتی بہبود پر فوری توجہ کریں

مسلمانوں کو کپڑے نہیں تحفظات دئے جائیں۔ ایس کے افضل الدین
حیدرآباد ۔ 21 ۔ جون : ( سیاست نیوز ) : جنرل سکریٹری تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی مسٹر ایس کے افضل الدین نے محکمہ اقلیتی بہبود پر توجہ دینے کا چیف منسٹر کے سی آر سے مطالبہ کیا اور کہا کہ مسلمان حکومت کے کپڑوں کی محتاج نہیں ہے ۔ مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات دئے جائیں ۔ انہوں نے کہا کہ اقلیتی بہبود کا قلمدان چیف منسٹر کے سی آر کے پاس ہے ۔ مگر اس کا جائزہ لینے چیف منسٹر کے پاس وقت نہیں ہے جس سے مسلمانوں کا نقصان ہورہا ہے ۔ اردو اکیڈیمی لائبریری ایمپلائز کی 6 ماہ سے تنخواہیں ادا نہیں کی گئی ۔ ائمہ موذنین کو معاوضہ ادائیگی کے معاملے میں ٹال مٹول کی پالیسی اپنائی جارہی ہے ۔ حج ہاوز سے متصل نئی عمارت کی تعمیرات کو ادھورا چھوڑا گیا ہے ۔ جس سے وقف بورڈ کے 40 تا 50 کروڑ روپئے منجمد ہو کر رہ گئے ہیں ۔ سڑک توسیع کے دوران دونوں شہروں میں وقف کی قیمتی اراضیات حاصل کرلی گئی ہیں گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن وقف بورڈ کو تقریبا 500 کروڑ روپئے باقی ہے ۔ اس کی اجرائی کو یقینی بنانے جی ایچ ایم سی سنجیدہ نہیں ہے ۔ جب کہ آر ٹی سی کو خسارے سے باہر نکالنے جی ایچ ایم سی کی جانب سے 200 کروڑ روپئے کی اجرائی کو یقینی بنایا جارہا ہے ۔ عازمین حج کے انتخاب میں بے قاعدگیاں منظر عام پر آئی ہیں ۔ تلنگانہ تشکیل کے دو سال کی تکمیل کے باوجود اردو اکیڈیمی کو تقسیم نہیں کیا گیا ۔ اسمبلی میں منظوری کے باوجود گذشتہ 2 سال سے 50 فیصد اقلیتی بجٹ خرچ نہیں ہوا ہے ۔ چیف منسٹر نے اقلیتی بہبود کا قلمدان اپنے پاس رکھا ہے ۔ جس سے ریاست کے اقلیتوں میں کافی امیدیں وابستہ تھیں لیکن ان دو سال میں سارے امیدوں پر پانی پھیر گیا ہے ۔ چیف منسٹر کو اقلیتوں بالخصوص مسلم مسائل سے کوئی دلچسپی نہیں ہے ۔ وہ اپنا زیادہ تر وقت فارم ہاوز پر گذارتے ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT