Tuesday , October 24 2017
Home / شہر کی خبریں / چیف منسٹر کیمپ آفس کو سیاحتی مقام بنایا جائے

چیف منسٹر کیمپ آفس کو سیاحتی مقام بنایا جائے

فارم ہاوز کو بھی فہرست میں شامل کرنے پر زور ‘ پونم پربھاکر
حیدرآباد 24 ڈسمبر ( این ایس ایس ) کانگریس لیڈر و سابق ایم پی پونم پربھاکر نے آج تلنگانہ ٹورازم ڈیولپمنٹ کارپوریشن کے صدر نشین پی راملو کو ایک مکتوب روانہ کرتے ہوئے کہا کہ وہ چیف منسٹر کے کیمپ آفس اور ان کے فارم ہاوز کو بھی سیاحتی مقامات قرار دیں اور عوام کو ان کے مشاہدہ کی اجازت دی جائے ۔ سابق ایم پی نے کہا کہ چیف منسٹر کے کیمپ آفس اور ان کے فارم ہاوز کو سیاحتی مقامات میں تبدیل کرنے کا خیال واٹس اپ پر پیش کیا جا رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ریاست میں مختلف سیاحتی مقامات ہیں۔ ان میں اورو گلو قلعہ ہے جو کاکتیہ بادشاہوں نے بنایا تھا ‘ گولکنڈہ قلعہ ہے جسے قطب شاہی حکمرانوں نے تعمیر کیا ‘ چارمینار بھی موجود ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کاکتیہ ‘ قطب شاہی اور نظام حکمرانوں کا نام ان کی یادگار تعمیرات کیلئے تاریخ میں برقرار رہے گا ۔ موجودہ چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ نے بھی پرگتی بھون ( چیف منسٹر کا کیمپ آفس ) اور فارم ہاوز تعمیر کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ٹورازم کارپوریشن کے صدرنشین کو چاہئے کہ وہ پرگتی بھون اور چیف منسٹر کے تعمیر کردہ فارم ہاوز کو تلنگانہ کی سیاحتی فہرست میں شامل کریں۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ خود کو ایک بادشاہ سمجھنے لگے ہیں۔ عوام بھی ڈھائی سال کا اقتدار دیکھنے کے بعد یہ محسوس کرنے لگے ہیں کہ کے سی آر بادشاہ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کوئی چیف منسٹر ہوتا ہے تو وہ عوام کے مسائل کے تعلق سے سوچتا ہے جبکہ بادشاہوں کو عوام کے مسائل کی کوئی پرواہ نہیں ہوتی ۔ ایک چیف منسٹر وہ کرتا ہے جو عوام چاہتے ہیں جبکہ ایک بادشاہ وہ کرتا ہے جو خود وہ چاہتا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT