Monday , August 21 2017
Home / Top Stories / چیف منسٹر کی حیثیت سے نتیش کمار کی حلف برداری

چیف منسٹر کی حیثیت سے نتیش کمار کی حلف برداری

لالو پرساد کے دو فرزندان کو وزارت، نئی کابینہ میں جملہ 28 وزراء، تیجسوی ڈپٹی چیف منسٹر ہوں گے
پٹنہ ۔ 20 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) نتیش کمار نے آج آر جے ڈی کے سربراہ لالو پرساد کے دو فرزندان تیجسوی اور تیج پرتاپ کے بشمول 28 وزراء کے ساتھ حلف لیا۔ غیر بی جے پی پارٹیوں سے تعلق رکھنے والے کئی اعلیٰ قائدین نے اس عظیم الشان حلف برداری تقریب میں شرکت کی۔ آر جے ڈی جنتادل (یو) کانگریس کے عظیم اتحاد کی حکومت تشکیل پائی ہے۔ نتیش کمار کے علاوہ آر جے ڈی اور جنتادل (یو) فی پارٹی 12 ارکان اور کانگریس کے 4 وزراء کو گورنر رام ناتھ کوند نے حلف دلایا۔ قیاس آرائیاں کی جارہی ہیکہ پہلی مرتبہ منتخب ہونے والے رکن اسمبلی تیجسوی گاندھی میدان میں منعقدہ حلف برداری تقریب میں نتیش کمار کے بعد حلف لینے والے دوسرے فرد تھے۔ انہیں ڈپٹی چیف منسٹر بنایا جائے گا۔ نتیش کمار نے پانچویں مرتبہ چیف منسٹر کی حیثیت سے حلف لیا۔ نئے وزراء کے قلمدانوں کو بہت جلد تفویض کیا جائے گا۔ حلف برداری تقریب میں کانگیرس کے نائب صدر راہول گاندھی، سابق وزیراعظم ایچ پی دیوے گوڑا، چیف منسٹر مغربی بنگال ممتابنرجی، چیف منسٹر دہلی اروند کجریوال کے بشمول کئی قائدین نے شرکت کی۔ کانگریس حکمرانی والی ریاستوں کے چیف منسٹر بہار کی نئی حکومت کی حلف برداری تقریب میں شریک تھے۔ مرکزی وزیر ایم وینکیا نائیڈو جنہیں وزیراعظم نریندر مودی نے تقریب میں شرکت کیلئے مقرر کیا تھا وہ بھی شریک تھے۔ ان کے علاوہ سی پی آئی ایم کے سیتارام یچوری، سی پی آئی کے ڈی راجہ بھی موجود تھے۔ جنتادل (یو) کے سابق ریاستی صدر راجیو رنجن سنگھ لالن، بجندر پرشاد یادو، شراون کمار، جئے کمار سنگھ جو تمام سبکدوش کابینہ کے ارکان تھے، نے بھی حلف لیا۔ سابق ایم پی مہیش ہزاری ، کرشنا نندن پرشاد ورما ، سنتوش نیرالا ، خورشید عرف فیروزاحمد کو بھی حلف دلایا گیا۔ کابینہ کے نئے ارکان میں جنتادل (یو) کے شیلیش کمار، کماری منجوورما، مدن ساہنی اور کپل دیو کامت نے بھی حلف لیا۔ مہیشور ہزاری رام ولاس پاسوان کے رشتہ دار ہیں۔ آر جے ڈی کے کوٹہ کے علاوہ لالو پرساد یادو کے دو فرزندان کو کابینہ میں شامل کیا گیا ہے اور مسلم قائدین عبدالباری صدیقی، عبدالغفور کو بھی کابینہ میں شامل کیا گیا ہے۔ کانگریس کے ریاستی پارٹی سربراہ اشوک چودھری، مدن موہن جھا، عبدالجلیل مستان اور اودیش کمار کو بھی حلف دلایا گیا۔ دستوری دفعات کے مطابق کابینہ کا کوٹہ ایوان کی اکثریت کا 15 فیصد ہوتا ہے۔ نتیش کمار زیادہ سے زیادہ 36 ارکان کو شامل کرسکتے ہیں۔ حلف برداری تقریب میں تمام کی نگاہیں تیجسوی اور تیج پرتاپ یادو پر مرکوز تھیں۔ این سی پی سربراہ شردپوار کے علاوہ دیگر ریاستوں کے چیف منسٹرس بھی حلف برداری تقریب میں شریک تھے۔ نائب صدر کانگریس راہول گاندھی مقام حلف برداری پر دیر سے پہنچے کیونکہ دہلی سے وہ تاخیر سے روانہ ہوئے تھے۔ این ڈی اے میں بی جے پی کی حلیف پارٹیاں شیوسینا اور شرومنی اکالی دل کے نمائندے بھی موجود تھے۔ لوک سبھا میں اپوزیشن لیڈر ملک ارجن کھرے، نیشنل کانفرنس لیڈر فاروق عبداللہ اور ان کے فرزند عمر عبداللہ، ڈی ایم کے قائدین ٹی آر بالو اور ایم کے اسٹالین، نیشنل لوک دل کے صدر اجیت سنگھ بھی شریک تھے۔ بی جے پی کے وینکیا نائیڈو لالو پرساد یادو کے بازو بیٹھے تھے اور وہ ان سے وقفہ وقفہ سے بات چیت بھی کررہے تھے۔ راہول گاندھی اہم شخصیتوں کی صف میں بیٹھے ہوئے تھے ان کے بازو دیوے گوڑا اور شرد یادو بھی موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT