Thursday , July 27 2017
Home / شہر کی خبریں / چیف منسٹر کی 18 جون کو دعوت افطار ، انتظامات کا جائزہ

چیف منسٹر کی 18 جون کو دعوت افطار ، انتظامات کا جائزہ

بارش سے فتح میدان پر پانی جمع ، صاف صفائی کیلئے عہدیداروں کا دورہ اور معائنہ
حیدرآباد ۔ 13۔ جون (سیاست نیوز) چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی 18 جون کو ہونے والی دعوت افطار کے انتظامات کا جائزہ لینے کیلئے حکومت کے مشیر اقلیتی بہبود اے کے خاں اور سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل نے مختلف محکمہ جات کے عہدیداروں کے ساتھ فتح میدان اسٹیڈیم کا دورہ کیا۔ گزشتہ چند دنوں سے شہر میں بارش کے سبب اسٹیڈیم میں پانی جمع ہوچکا ہے اور وہاں دعوت افطار کا اہتمام دشوار کن دکھائی دے رہا ہے۔ تاہم طئے شدہ مقام کو برقرار رکھنے کیلئے فیصلہ کیا گیا کہ سارے اسٹیڈیم میں چوکیاں بچھادی جائیں گی جن پر افطار کا اہتمام کیا جائے گا ۔ بتایا جاتا ہے کہ بارش کے سبب اسٹیڈیم کی زمین نہ صرف نرم پڑ گئی بلکہ جگہ جگہ کیچڑ جمع ہوچکا ہے۔ پانی کی نکاسی اور کیچڑ کو خشک کرنے کیلئے مورم اندازی کا فیصلہ کیا گیا۔ اس موقع پر کمشنر پولیس حیدرآباد ، کمشنر پولیس سائبر آباد ، سکریٹری جی اے ڈی کے علاوہ آر اینڈ ڈی ، واٹر ورکس ، برقی اور گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کے عہدیدار موجود تھے۔ اے کے خاں نے اسٹیڈیم کی نگہداشت کرنے والے عہدیداروں کو ہدایت دی کہ وہ پانی کی نکاسی پر خصوصی توجہ دیں ۔ کل سے اسٹیڈیم میں چوکیوں کے بچھانے کا کام شروع کردیا جائے گا ۔ دعوت افطار کے دن بارش کی صورت میں بھی احتیاطی اقدامات کو قطعیت دی جارہی ہے۔ سکریٹری اقلیتی بہبود نے بتایا کہ چیف منسٹر کی دعوت افطار پر ایک کروڑ پانچ لاکھ روپئے کا خرچ آئے گا۔ اور جاریہ سال 6750 مدعوئین دعوت افطار میں شریک رہیں گے۔ اسٹیڈیم میں 4 علحدہ انکلوژرس تیار کئے جارہے ہیں۔ A-I اور A-II انکلوژرس میں وی وی آئی پی اور وی آئی پی کے 750 مدعوئین ہوں گے جبکہ بی انکلوژر میں 2000 اور سی میں 2000 افراد کا انتظام رہے گا۔ چیف منسٹر نے دعوت افطار کا اہتمام اپنی سرکاری قیامگاہ پرگتی بھون میں کرنے کی پیشکش کی تھی ۔ تاہم عہدیداروں نے بتایا کہ بیک وقت 6750 افراد کیلئے انتظام کرنا دشوار کن ہے لہذا فتح میدان اسٹیڈیم کا انتخاب عمل میں آیا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT