Wednesday , September 20 2017
Home / سیاسیات / چیف منسٹر ہماچل پردیش بھی قوم دشمن ہیں؟

چیف منسٹر ہماچل پردیش بھی قوم دشمن ہیں؟

ہند۔پاک کرکٹ میچ کی مخالفت پر بی جے پی سے شیوسینا کا سوال
ممبئی ۔ 9 ۔ مارچ (سیاست ڈاٹ کام ) ہماچل پردیش میں ہند۔پاک کرکٹ ٹی 20 ورلڈکپ میچ کے منعقد کرنے پر جاریہ تنازعہ کے دوران شیوسینا نے آج بی جے پی سے یہ سوال کیا کہ آیا چیف منسٹر ویربھدرا سنگھ کو بھی میچ کی مخالفت پر قوم دشن قرار دیا جائے گا۔ وویر بھدرا سنگھ نے اپنی بات میں ہند۔پاک کرکٹ میچ کی مخالفت کی ہے ۔ یہ مخالفت نہ سیاسی ہے اور نہ ہی مذہبی ہے جبکہ شہید فوجی جوانوں کے رشتہ داروں کی یہ احتجاجی آواز ہے۔ شیوسینا کے ترجمان سامنا کے اداریہ میں کیا گیا کہ اگر ویر بھدرا سنگھ یہ سمجھتے ہیکہ کرکٹ میچ منعقد کرنا شہید فوجیوں کی بے حرمتی ہے۔ کیا تم (بی جے پی) انہیں قوم دشمن قرار دیتے ہوئے پھانسی پر لٹکادو گے ۔ قبلازیں چیف منسٹر ہند۔پاک کرکٹ میچ کی مزاحمت کرتے ہوئے کہا تھا کہ ریاستی حکومت کھلاڑیوں کی حفاظت کیلئے یقین دہانی نہیں کرواسکتی ہے اور سرزمین ہند پر پاکستانی کھلاڑیوں کے استقبال سے شہید سپاہیوں کی بے حرمتی ہوگی۔ ہندوستان میں پاکستانی کھلاڑیوں کی سلامتی کو یقینی بنانے سے متعلق مرکز کے موقف پر انگشت نمائی کرتے ہوئے شیوسینا نے دریافت کیا کہ ساتھ میں اس طرح کے مواقع پر اس کی خود اعتمادی کہاں گئی تھی ۔ این ڈی اے کی حل یف جماعت نے یہ سوال اٹھایا کہ آیا جب کرکٹ میچ مہاراشٹرا ملک کے دیگر علاقوں میں کسانوں کی خودکشی کی روک تھام کیلئے کھیلا جارہا ہے ۔ کیا جموں و کشمیر میں امن بحال ہوجائے گا ۔ کیا ہمارے سپاہی سرحد پر محفوظ ہوجائیں گے ، کیا پاکستان موافق نعرے بند ہوجائیں گے۔ شیوسینا نے بی جے پی کو خبردار کیا کہ اعتراض کے باوجود یہ میچ کھیلا گیا تو عوام کی برہمی کا سامنا کرنا پڑے گا۔ ترجمان نے مزید کہا کہ پٹھان کوٹ حملہ کی تحقیقات کیلئے شیوسینا نے بی جے پی کو خبردار کیا کہ اعتراض کے باوجود یہ میچ کھیلا گیا تو عوام کی برہمی کا سامنا کرنا پڑے گا ۔ ترجمان نے مزید کہا کہ پٹھان کوٹ حملہ کی تحقیقات کیلئے پاکستانی ٹیم کی آمد سے ہمارے سپاہیوں کی توہین ہوگی ۔ اگرچیکہ ہندوستان میں حکومت تبدیل ہوگی لیکن پاکستان کی خوشامدی کا سلسلہ بند نہیں ہوا۔

TOPPOPULARRECENT