Thursday , September 21 2017
Home / Top Stories / چیف منسٹر یوگی پہنچے پارلیمنٹ، وزیر اعظم سے ملاقات

چیف منسٹر یوگی پہنچے پارلیمنٹ، وزیر اعظم سے ملاقات

نئی دہلی 21 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) اترپردیش کے چیف منسٹر یوگی ادتیہ ناتھ نے آج وزیر اعظم نریندر مودی سے ملاقات کی۔ یوگی ادتیہ ناتھ وزیر اعلی بننے کے بعد پہلی بار پارلیمنٹ آئے اور مودی سے ان کے دفتر میں ملاقات کی۔ سمجھا جاتا ہے کہ چیف منسٹر نے ریاست میں وزراء کو سونپے جانے والی ذمہ داریوں کے سلسلہ میں بات چیت کی۔ اس کے ساتھ ہی اتر پردیش کی مختلف ترقیاتی اسکیموں کے نفاذ پر تبادلہ خیال کیا گیا۔وزیر اعظم کے دفتر نے ایک ٹویٹ کرکے بتایا کہ یوگی ادتیہ ناتھ نے مودی سے ملاقات کی۔ وزیر اعظم نے انہیں وزیر اعلی کے عہدے سنبھالنے کے لئے نیک خواہشات پیش کیں ۔ دونوں قائدین نے کئی مسائل پر تبادلہ خیال کیا۔یوگی ادتیہ ناتھ نے وزیر فینانس ارون جیٹلی سے بھی ملاقات کی۔ اس موقع پر مملکتی وزیرفینانس ارجن میگھوال اور سنتوش گنگوار بھی موجود تھے ۔ بھارتیہ جنتا پارٹی نے اپنے انتخابی منشور میں چھوٹے اور درمیانی کسانوں کے زرعی قرضے معاف کرنے کا اعلان کیا ہے ۔ نئے وزیر اعلی نے بعد میں صدر جمہوریہ پرنب مکرجی سے بھی ملاقات کی۔دریں اثنا راجیہ سبھا رکن سبرامنیم سوامی نے ایک ٹویٹ کرکے بتایا ہے کہ انہوں نے یوگی ادتیہ ناتھ سے ملاقات کی ہے اور انہیں سپریم کورٹ میں ایودھیا میں رام مندر کے سلسلے میں آج کی سماعت سے آگاہ کیا۔ سوامی نے بتایا کہ اس معاملے میں تفصیلی طور سے بات چیت کرنے کے لئے کل لکھنؤ میں چیف منسٹر کے ساتھ ملاقات کی جائے گی۔غور طلب ہے کہ سپریم کورٹ نے رام جنم بھومی ۔ بابری مسجد تنازعہ سے منسلک فریقین سے اس مسئلے کو مل بیٹھ کر خوشگوار طریقے سے حل کرنے کی صلاح دی ہے ۔ سوامی نے عدالت سے رام جنم بھومی ۔بابری مسجد تنازعہ پر جلد سماعت کرنے کی درخواست کی تھی۔ اس پر چیف جسٹس جے ایس کھیہرنے کہا کہ یہ بہت ہی حساس معاملہ ہے اس لئے بہتر ہوگا کہ معاملے سے منسلک فریق اس کو باہمی رضامندی سے حل کرلیں۔ انہوں نے کہا کہ اگر متعلقہ فریق چاہیں تو وہ خود اس معاملے میں ثالثی کرنے کو تیار ہیں یا کسی دیگر عدالتی افسر کو بھی وہ اس کے لئے منتخب کر سکتے ہیں۔

 

تمام طبقات کی ترقی کیلئے کام کرنے آدتیہ ناتھ کا عہد
یوپی کے چیف منسٹر کی لوک سبھا میں حاضری، مختصر خطاب، سخت گیر ہندوتوا موقف دور کرنے کی کوشش
نئی دہلی ۔ 21 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) یوگی آدتیہ ناتھ، اترپردیش کے چیف منسٹر کی حیثیت سے اپنا نیا عہدہ سنبھالنے کے دو دن بعد آج لوک سبھا میں حاضر ہوئے، جس کے وہ ہنوز رکن ہیں۔ اس موقع پر انہوں نے اپنے اس عہد کا اعادہ کیا کہ وہ ترقی و خوشحالی کا ’’ایک نیا ڈھانچہ‘‘ تیار کرتے ہوئے عوام کے تمام طبقات کی ترقی کیلئے کام کریں گے۔ روایتی زعفرانی لباس میں ملبوس ادتیہ ناتھ کی ایوان زیریں میں آمد پر ارکان نے پرتپاک استقبال کیا۔ اسپیکر سمترامہاجن نے بھی انہیں مبارکباد دی۔ شعلہ بیان ہندوتوا لیڈر کی حیثیت سے پہچانے جانے والے ادتیہ ناتھ نے اترپردیش میں اقتدار پر فائز ہونے کے بعد پیدا شدہ اندیشوں کو دور کرتے ہوئے کہا کہ ’’اترپردیش میں سب کا ساتھ سب کا وکاس‘‘ پر مبنی ایک نیا ترقیاتی ماڈل متعارف کیا جائے گا‘‘۔ انہوں نے کہا کہ ’’میری حکومت محض کسی مخصوص طبقہ یا ذات کیلئے نہیں بلکہ سب کیلئے حکومت ہم سماج کے تمام طبقات اور ذاتوں کی ترقی کیلئے کام کریں گے۔ ترقی و خوشحالی کیلئے ایک نیا ڈھانچہ تشکیل دیا جائے گا‘‘۔ یوگی ادتیہ ناتھ نے مزید کہا کہ ان کی حکومت مودی کی رہنمائی میں ترقی کا ایک نیا ماڈل بنائے گی۔ اترپردیش میں وزیراعظم نریندر مودی کے خواب کو حقیقت میں تبدیل کرنے کیلئے ترقیاتی کام کئے جائیں گے۔ انہوں نے ایوان کے تمام ارکان کو اترپردیش کا دورہ کرنے کی دعوت دی۔

TOPPOPULARRECENT