Monday , October 23 2017
Home / کھیل کی خبریں / چیمپئنز ٹرافی :ہند۔پاک ڈراز میں فکسنگ، نئی بحث کا آغاز

چیمپئنز ٹرافی :ہند۔پاک ڈراز میں فکسنگ، نئی بحث کا آغاز

لندن۔ 3 جون ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) انٹرنیشنل کرکٹ کونسل کی جانب سے ’ڈراز فکسنگ‘ کے اعتراف نے نئی بحث شروع کر دی، بڑے ایونٹس میں جان بوجھ کر ہند۔پاک میچز کو یقینی بنانے پر حیرت ظاہر کی جا رہی ہے۔ ادھر کونسل ذرائع کا کہنا ہے کہ چیمپئنز ٹرافی کے گروپس متوازن اور کسی کو ناجائز فائدہ نہیں دیا گیا۔ آئی سی سی کے چیف ایگزیکٹو ڈیورچرڈسن نے میڈیا سے بات چیت میں اس بات کا اعتراف کیا تھا کہ بڑے ٹورنامنٹس میں جان بوجھ کر ہندوستان اور پاکستان کو ایک گروپ میں شامل کیا جاتا ہے۔ ان کے اس بیان کو دنیا بھر کے میڈیا نے ’ڈراز فکسنگ‘ قرار دیا گیا، اس معاملے کو شہ سرخیوں میں جگہ بھی دی گئی جبکہ سوشل میڈیا پر بھی یہ چھایا ہوا ہے، اس حوالے سے آئی سی سی کے ذرائع نے بتایا کہ اگر آپ چیمپئنز ٹرافی کے دونوں گروپس پر نظر ڈالیں تو سیڈنگ مجموعہ 18 ہے، اس کا مطلب یہ ہے کہ دونوں ہی گروپس انتہائی متوازن اور کسی کو بھی ناجائز فائدہ نہیں دیا گیا، ویسے بھی گروپس کا فیصلہ ٹیموں کی 30 ستمبر 2015 کی رینکنگ کے حساب سے کیا گیا ہے۔ یاد رہے کہ چیمپئنز ٹرافی آئی سی سی کا مسلسل پانچواں ایونٹ ہوگا جس میں ہندوستان اور پاکستان گروپ اسٹیج پر ایک دوسرے کا مقابلہ کریں گے۔ ادھر دوسری جانب چیمپئنز ٹرافی میں شریک دیگر بڑی ٹیموں نے بھی ایونٹ میں ہند۔پاک میچ کو اس طرح واضح کرنے پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایونٹ میں ہماری شمولیت کو نظر انداز کرنے کی کوشش کی گئی ہے ہم حیران ہیں کہ آئی سی سی نے یہ اقدام کیوں اٹھایا ہے۔

TOPPOPULARRECENT